کاشف شاہ لڑ رہے ہیں مقدمہ رئیل اسٹیٹ سیکٹر کا ۔۔۔۔۔۔۔۔

پاکستان بھر کے رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کی تنظیم میں کن مشکلات اور مسائل کا شکار ہیں اور ان پر کوئی توجہ بھی دے رہا ہے یا نہیں ؟خود رئیل اسٹیٹ سیکٹر پر حکومت کی کتنی توجہ ہے ۔حکومت اس شعبے سے ریونیو کو آنا چاہتی ہے لیکن بنیادی سہولتیں تحفظ اور پورکشیش اقدامات کرنے سے گریزاں ہے آخر ایسا کیوں ہے ؟کیا کوئی شعبہ ون وے ٹریفک کے ذریعے ترقی کر سکتا ہے تالی دونوں ہاتھوں سے بجتی ہے لہذا حکومت کو سرکاری سطح پر رئیل اسٹیٹ سیکٹر کی سرپرستی اور حوصلہ افزائی کے لئے بھرپور اقدامات کرنے چاہئیں سچی بات ہے اس وقت ضافی ٹیکسوں کے باعث رئیل اسٹیٹ سیکٹر زبوں حالی کا شکار ہے ۔ آل کراچی ریل لیٹرز ایسوسی ایشن اکرا کے چیئرمین سید اشیاء لڑ رہے ہیں مقدمہ رئیل اسٹیٹ سیکٹر کا ۔۔۔۔۔ان کا کہنا ہے کہ کیپٹل گین ٹیکس ویلیویشن اور ٹیکسیشن کے دیگر معاملات کے باعث ملک بھر میں رئیل اسٹیٹ سیکٹر زبوحالی کا شکار ہوگیا ہے کراچی میں اقرا کے نو منتخب نمائندگان کی تقریب حلف برداری منعقد ہوئی اس موقع پر میڈیا سے رسول کرتے ہوئے سید کاشف شاہ کا کہنا تھا کہ کراچی سمیت رئیل اسٹیٹ سیکٹر کے مسائل کے حل میں اخرہ اپنا کردار ادا کرے گی تقریب میں سابق چیئرمین آباد عارف یوسف جیوا آصف سامسنگ سردار طاہر محمود میجر ریٹائرڈ حضرت رفیق ناصر جاوید امیر حمزہ سمیت ملک بھر کے دیگر شہروں سے آئے ہوئے پراپرٹی اور اسٹیٹ ایجنٹس کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔اس حوالے سے کاشف شاہ کا کہنا ہے کہ اس وقت ہمارے ساتھ کراچی کی نو ایسوسی ایشنز موجود ہیں اور مستقبل میں ان کی تعداد میں مزید اضافہ متوقع ہے ہم اپنی ایسوسی ایشن کا دائرہ کار اندرون سندھ تک بڑھائیں گے ہم نے پوچھا اور پسماندہ علاقوں کے پراپرٹی اور اسٹیٹ ایجنٹس کو ایک پلیٹ فارم پر لا کھڑا کیا ہے ۔ممتاز بلڈر اور سابق چیئرمین آباد عارف یوسف جیو نے اس موقع پر کہا کہ یہ اچھا پلیٹ فارم ہے اور یہاں پراپرٹی اور اسٹیٹ کے معاملات کے حوالے سے تجربہ کار ٹیم موجود ہے کراچی ریئل اسٹیٹ اور کنسٹرکشن کا مرکز ہے جائیدادوں کی تین اقسام کی ویلیوایشن سے مسائل بڑھ گئے ہیں ۔بعدازاں تقریب حلف برداری میں راحیل ہارون نے چیئرمین مستفیض الرحمان نے صدر شیخ فیصل نےسینئر  نائب صدر ۔آغا شاہ گل نے نائب صدر سید محمد عرفان عالم نے جنرل سیکریٹری و سید صابر حسین شاہ نے جوائنٹ سیکرٹری کے عہدوں کا حلف اٹھایا