ریلوے مسافروں کے لئے عذاب

وفاقی وزیر ریلوے مسافروں کے لئے عذاب بن گئے ریلوے کو ٹھیک کرنے کی بجائے تباہ کرنے پر تل گئے تمام ٹرینوں سے ڈایئنگ کارکے بھاری رشوت نہ ملنے پر ٹھیکے ری نیو نہ ہونے کی وجہ سے پشاور  پنڈی اور لاہور سے کراچی  آنے والے مسافر شدید گرمی  میں  رل تفصیلات کے مطابق پاکستان ریلوے  جو 2013 کے بعد  خواجہ سعد رفیق  کی قیادت میں ٹھیک  ہوگیا تھا تبدیلی سرکار کے رتن  شیخ رشید  کے آتے ہی ایک بار پھر  زبوں حالی کا شکار ہو گیا ہے ریلوے تباہی کے دھانے پر آنے کے بعد اب مسافر ٹرینوں سے ڈایئنگ کار  کا خاتمہ  ہو گیا ہےزذرایع نے انکشاف کیا کہ پاکستان ریلوے مسافروں کے لئے سہولتیں فراہم کرنے کی بجائے موجود سہولیات کو ختم کر رہا جس کی تازہ مثال ٹرینوں سے کھانا  فراہم کرنے والی ڈایئنگ کار کا خاتمہ ہے وزیر باتدبیر  کمائی  میں مصروف ہیں جبکہ  ریلوے تباہی کے گہرے گڑھے  میں گر گیا ہے ذرائع کا یہ بھی بتانا ہے کہ پہلے جب ٹینڈر ختم ہوجائے تھے تو دوبارہ اگر لیٹ بھی  ہوجائے تھے تو گاڑیوں میں ڈایئنگ کار کا خاتمہ نہیں ہوتا تھا موجودہ وزیر  ریلوے نے بڑی بھڑکیں تو ماریں مگر کام دھلے  کا بھی  نہیں کیا لوٹ مار عروج پر پہنچ گئی ہے آپ کرپشن کو روکنا مشکل ہو گیا ہے ڈایئنگ کار ز کے ٹھیکے دینے کے لئے بھاری رشوت طلب کی جا رہی ہے  جس کی وجہ سے ٹینڈر ز لییٹ ہو گئےہیں  جبکہ ریلوے مسافروں کا کوئی  پرسان حال  ہی نہیں ہے- report -mian tariq javed