بھارت کے خام خیالی اور سندھ اسمبلی کی قرارداد

کراچی: سندھ اسمبلی نے جمعرات کو بھارتی جارحیت کےخلاف اور افواج پاکستان سے اظہاریکجہتی کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی ۔ایوان میں قرارداد پر دو روز تک مسلسل بحث ہوتی رہی جس میں مجموعی طور پر 50سے زائد ارکان نے حصہ لیا اور اس دوران اسمبلی کی جانب سے معمول کے تمام بزنس پر غور موخر کردیا گیا، قائد ایوان وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے دفاع وطن کے لئے پوری قوم اورمسلح افواج کے جذبے کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی سلامتی اور بقا کے معاملے پر ہم سب متحد ہیں جبکہ قائد حزب اختلاف فردوس شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے ،جنگ پورے خطے کے مفاد کے خلاف ہے انہوں نے پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے پر پیپلز پارٹی کے شہید چیئرمین ذوالفقار علی بھٹو کو بھی خراج عقیدت پیش کیا۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے اپنے خطاب میں کہا کہ پلوامہ حملے میں ملوث خود کش بمبار بھارتی شہری تھا جس کا ہم سے کوئی تعلق نہیں اور اسی حملہ آور کوبھارت نے کئی بار گرفتار بھی کیا تھالیکن اس کے باوجود بھارت نے پاکستان پر الزامات لگانا شروع کردیئے۔انہوں نے کہا کہ ہم جنگ سے نہیں ڈرتے لیکن جنگ ہماری کبھی خواہش نہیں رہی اور پاکستان ایک امن پسند ملک ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم متحد ہے ،پاکستان میں سیاسی جماعتوں اتحاد کی وجہ سے فوج کو قابل فخر کامیابی ملی ہے، مراد علی شاہ نے کہا کہ بھارتی طیاروں نے پاکستانی کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی جس پر پاکستان ائیر فورس نے بھارتی طیاروں کو مارگرایا۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے اگر پاکستان میں 300 افراد کو یا ایف سولہ طہارے کو نشانہ بنایا ہے تو وہ کوئی ثبوت بھی پیش کرے محض جھوٹے دعوﺅں پر کوئی یقین نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان کے خلاف پروپگینڈہ کررہا ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے ایوان کو بتایا کہ حالات کے پیش نظر سندھ میں بھی ایک ایس اوپی پر عمل کررہے ہیں اور درکار انتظامات بہتربنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ سرحدی علاقوںمیں ادویات اور خوراک کی سپلائی بحال رکھنے کے لئے ضروری انتظامات کئے جارہے ہیں۔انہوں نے ایوان کو یقین دلایا کہ کوئی بھی صورتحال ہوئی تو سندھ حکومت اپوزیشن کواعتماد میں لےگی۔وزیر اعلیٰ کے خطاب کے بعداسپیکر آغا سراج درانی نے اسمبلی کا معمول کا ایجنڈا کل تک موخر کرکے اجلاس جمعہ کی سہ پہر تین بجے تک ملتوی کردیا۔ قبل ازیں قرارداد پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے قائد حزب اختلاف فردوس شمیم نقوی نے قرارداد پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ہم وزیر اعظم پاکستان کو سلوٹ کرتے ہیں جنہوںنے بڑے واضح الفاظ میں بھارت کو بتادیا ہم مہذب اور امن پسند ملک ہیں، پوراپاکستان آج شہید بھٹو کو بھی خراج عقیقدت پیش کرتا ہے جس نے اس مملکت کو ایٹمی قوت بنایا،عمران خان بھی قوم کے وہ لیڈرہیں جو جھکنے والے نہیں ،عمران خان نے واضع پیغام دیا ہے وہ امن چاہتے ہیں ،وزیر اعظم نے بھارتی ہواباز کو رہا کرکے امن کا پیغام دیاہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستانی امن چاہتے ہیں اور جنگ میںکبھی پہل نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہماری امن کی خواہش کے باوجود بھارت کی جانب سے کشمیری مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے اور وہ پاکستان کے خلاف جارحیت کا مرتکب ہوا ہے ،کشمیر کے سینکڑوں لوگوں کو بے گناہ شہید کیا گیا صرف اس بنا پر کہ وہ مسلمان ہیں۔ فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ ہم نے عزت اور خلوص کا مظاہرہ کیا مگر اسے ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے ،جب آپ ہمیں تکلیف دوگے تو ہم بھی اپنی سلامتی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے ،ہم مرنے سے نہیںڈرتے ہر مسلمان شہادت کی خواہش رکھتا ہے۔پورا خطہ جنگ نہیں چاہتا مہاتما گاندہی بھی امن کے خواہاں تھے اور ان کافلسفہ بھی امن کا فلسفہ تھا۔انہوں نے کہا کہ ہم حقائق بتا رہے ہیں جنگ مسائل کا نہ تو حل ہے نہ ہی حل دے گا ہر کوئی امن چاہتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم جنگ چاہتے ہیں مگر بھوک، بربادی، عدم خوشحالی کے خلاف جنگ کے خواہاں ہیں۔قرارداد پر بحث میں دوسرے ارکان نے بھی بڑے جذباتی انداز میں اظہار خیال کیا۔رکن سندھ اسمبلی شہزاد قریشی نے کہا کہ جنگ مسائل کا حل نہیں ہے عام آدمی کو بنیادی سہولیات میسر نہیں ہیں،وزیراعظم کہہ چکے ہم جنگ نہیں چاہتے اگر جنگ مسلط کی گئی تو ملک کا بچہ بچہ جان کا نزرانہ دینے کے لئے تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ جس ملک کا دفاع مضبوط ہو اس پر حملہ کرنے والے سو دفعہ سوچتے ہیںہمارا دفاع مضبوط اور مضبوط ہاتھوں میں ہے مگر امن کے لیئے جنگ واحد راستہ نہیں اس سے بچنا سب کی ذمہ داری ہے۔جنگ مسلط کی گئی تو ملک کا بچہ بچہ میدان جنگ میں ہوگا۔ایم کیوایم پاکستان کے ندیم صدیقی نے کہا کہ امن کے لیئے ہم متحد بھی ہیں اور متفق بھی ہیں تمام قوم پاک فوج کے پیچھے کھڑی ہے ۔ پیپلز پارٹی کے عبدالباری پتافی نے کہا کہ جنگ سے صرف تباہی آتی ہے ،ہم سندھ کے باسی ہیں اپنے صوبے اپنے وطن اور دنیا بھر میں امن کے خواہاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کی صحیح تشریح نہ ہونے سے تحاریک اور جدوجہد کو غلط نام دیا گیا۔بھارت نے ہمیشہ غلط بہانے بناکر پاکستان پر الزام تراشیاں کی ہیں۔ جی ڈی اے کے رکن اسمبلی ڈاکٹر رفیق بھابھن کا کہنا تھا کہ مودی اور اسکی سرکار بزدل ہے۔پاکستان ایک عظیم ملک ہے۔ اسے تباہ کرنے کا خواب بھارت کی خام خیالی ہے ،پاک فضائیہ نے بھارت کو بھرپور جواب دیا ،پاکستان مضبوط اور متحد ہے ، ہماری جانب کوئی میلی نگاہ سے نہیں دیکھ سکتا۔ لبیک پاکستان کی خاتون رکن ثروت فاطمہ نے کہا کہ پاک آرمی نے بھارتی جنگی جنون کابھرپور جواب دیا،تحریک لبیک پاکستان کے کارکنان پاک افواج کےساتھ ہیں۔ سابق وزیر داخلہ سندھ اور پی پی کے رکن اسمبلی سہیل انور سیال کا کہنا تھا کہ آج پاکستان ایٹمی طاقت ہے تواس کا سہرا شہید ذوالفقارعلی بھٹو کے سر جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملکی دفاع کوناقابل تسخیربنانے میں پیپلزپارٹی کابڑاحصہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی پائلٹ کی رہائی کے اعلان کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف کے رکن اسمبلی ارسلان تاج نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے بھارت کو پیغام دیاکہ امن کے لئے قدم بڑھاﺅ،جنگ کرناہے توغربت اورجہالت کےخلاف کرو،ہم امن کے اوربھارت نفرت کے بیج بورہا ہے،وزیراعظم نے بڑا اعلان کرکے بھارتیوں کے منہ پرطمانچہ مارا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طمانچہ طیارہ گراکرمارا دوسرا طمانچہ بھارتی پائلٹ کورہاکرنے کا اعلان کرکے مارا ہے ۔امن ہماری کمزوری نہیں ہے لیکن ہم دنیا میں امن کے خواہاں ہیں۔پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی محمد علی ملکانی نے کہا کہ مودی کو دنیا کی دوسری بڑی آبادی کا حکمران ہونے کے ناتے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیئے ،جنگ کسی ملک،قوم اور خطے کے لیئے مناسب نہیں مگر ہم سلامتی سے غافل نہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم بھاگنے والی نہیں ہندوستان کو موجودہ سبق سے نصیحت حاصل کرنا چاہیئے اور وہ امن کا راستہ اختیار کرے۔ پیپلز پارٹی کے منور وسان نے پاک فوج کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا کہ بھارت جھوٹا پروپیگنڈہ کرتا ہے کشمیر میں مسلسل ہونے والا ظلم تاریخ سے پوشیدہ نہیں،کل بھی کہا مودی اقتدار سے ہٹ جاو¿ مجھ فقیر کی تم نے نہیں سنی اب اگر پہل کی تو پانچ جہاز مزید گریں گے۔رکن اسمبلی سید ہاشم رضا گیلانی نے پاک فوج کے جوانوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس کے حقدار ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت کو خواب غفلت سے نکلنا پڑے گا ہماری فوج نے موقع دیا مگر وہ سرپرائیز سے بھی نہ سدھرا تو ہم پھر بھی تیار ہیں۔انہوں نے خبردار کیا کہ اگر جنگ مسلط کی گئی تو یہ جنگ سرحدوں پر نہیں بلکہ بھارت کے اندر ہوگی ۔خاتون رکن سندھ اسمبلی شازیہ عمر نے کہا کہ ہم اس کڑے وقت میں پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ہر وقت تیار ہیں۔ پیپلز پارٹی کے رکن اسمبلی قاسم سراج سومرو نے کہا کہ بھارت نے ہمیشہ ایل او سی کی خلاف ورزیاں کیں اور ہم ہمیشہ دہشت گردی کا شکار رہے اس کے باوجود امن کا دامن کبھی نہیں چھوڑا۔انہوں نے کہا کہ انڈس ویلی ہمیشہ امن کی داعی رہی جہاں اسلحے کاوجود تک نہیں تھا۔انہوں نے بھارتی قیادت کو متنبہ کیا کہ جنگ میں پہل سے باز رہا جائے امن کی خواہش کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے ۔ پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی جام مدد علی کا کہنا تھا کہ پاکستان کا وجود کلمہ طیبہ پر قائم ہے اور امن ہمارے مذہب کا پیغام ہے مگر ہمارا دین دشمن سے حفاظت کا بھی حکم دیتا ہے ۔ہمیں کبھی مذہب کبھی لسانیت کی جنگ چھیڑ کر لڑانے کی کوششیں ہوتی رہیں۔ پی ٹی آئی کے سعید آفریدی نے کہا کہ ہماری فوج نے امن کے لئے بہت قربانیاں دی ہیں اگر ملک و قوم کو ہماری ضرورت پڑی تو ہم فوج کے شانہ بشانہ ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے جنگ بندی نہ کی گئی تو دہلی میں پی ایس ایل کا فائنل ہوگا۔ خاتون رکن سندھ اسمبلی حنا دستگیر نے کہا کہ پاکستان سے محبت کرنے والا ہر شہری فوجی ہے ،ہم جنگ نہیں چاہتے محبت اور عمل پر یقین رکھتے ہیں ،آج بھارت کے عوام غریب اور مشکل حالات کا شکار ہیں،انہوں نے کہا کہ ہم انسان اور انسانیت کوزندہ دیکھناچاہتے ہیں ۔ جی ڈی اے کے رکن صوبائی اسمبلی شہریار مہر نے کہا کہ ہم مودی کو بتانا چاہتے ہیں مودی انسان بنو اگر انسان نہ بنے تو ہم تمہیں انسان بنادیں گے۔پی پی کے رکن ممتاز جاکھرانی نے کہا کہ ہمارے ہاں اقلیتوں کو تمام حقوق حاصل ہیں مگر بھارت میں مسلمانوں کو گائے کے نام پر قتل کیا جاتا ہے ،بھارت زمین سے آئے یا سمندر سے اسے ہمیشہ جواب وہی ملے گا جو کل ملا تھا،ہم بھارت کو بتاتے ہیں امن چاہوگے امن ملے گا جنگ چاہو گے تو جنگ کریں گے اور اگر تم نے جنگ کی تو دہلی میں پاکستان کا پرچم لہرائیں گے ۔ پیپلز پارٹی کے رکن اسمبلی غلام جیلانی کا کہنا تھا کہ پاک فوج کو خراج کی مستحق ہے ہم بھارت کو بتادیتے ہیں انہوں نے حرکت نہ چہوڑی تو سبق سکھادیں گے۔ رکن سندھ اسمبلی ریاض شاہ شیرازی نے کہا کہ ایک وہ یزید تھا اور مودی بھی اپنے وقت کا یزید ہے ،ہم پر مقام پر پاک فوج کے ساتھ ہیں رہیں گے ۔ رکن صوبائی اسمبلی عزیز جی جی نے کہا کہ پاکستان اور بھارت دونوں ایٹمی قوت ہیں اس لئے بھارت کسی غلط فہمی میںنہ رہے ،بھارت کو بتادیتے ہیں ہمارا بچہ بچہ تمہیں سبق سکھانے کے لئے تیار ہے۔رکن سندھ اسمبلی صداقت حسین نے کہا کہ افواج پاکستان جان لے ہم نے چوڑیاں نہیں پہن رکھیں ان کو منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں