ایف پی سی سی آئی کا تجارتی اداروں کے انتخابی عمل کے دوران حال ہی میں مقرر کردہ DGTO کی تبدیلی پرشدید تشو یش کا اظہار۔

کراچی: 2019 فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامر س اینڈ انڈسٹر ی کے صدر انجینئر داروخان اچکزئی اور ایف پی سی سی آئی کے سابق صدر و سابق چیف ایگز یکٹو TDAPایس ایم منیر نے اپنے بیا ن میں کہاکہ وزارت تجا رت کی طر ف سے وزیر اعظم کو حالیہ تقر ر ہو نے والے DGTO کے تبا دلے کی تجو یز پیش کی گئی ہے۔ ایف پی سی سی آئی نے اپنا مو قف پیش کر تے ہو ئے کہاکہ اگر چہ DGTO کی تقر ری الیکشن پر وسیس سے کا فی پہلے ہو جا نی چا ہیے تھی نہ کہ الیکشن پر وسیس کے دوران۔218 ٹر یڈ با ڈیزکے نگرا ن کا الیکشن پر وسیس کے دوران تبا دلہ کر دیا جائے جو کہ ایک چو نکا دینے والی بات ہے، ہر سال ٹر یڈ با ڈیز جولا ئی سے دسمبر تک کے تمام الیکشن مراحل DGTO کی نگرا نی میں عمل میں لا ئے جا تے ہیں۔




DGTOکے تبا دلے سے نہ صرف الیکشن کے عمل میں خلل پیدا ہو گا بلکہ ٹر یڈ با ڈیز شفاف عمل اور تنا زعات کے حل کے حوالے سے افراتفری کا شکا ر ہو جا ئیں گی جو کہ DGTO کی رہنما ئی میں حل کیے جا تے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ دنیا میں کہی بھی ایسا نہیں ہو تا کہ انتخابی عمل کے دوران نگران افسران کا تبا دلہ کیا جاتا ہویہاں تک کہ پاکستان میں بھی انتخابات کے دوران تبا دلو ں اور پو سٹنگ پر مکمل پا بند ی عا ئد کر دی جا تی ہے۔ تا جر برا دری نے مطا لبہ کیا ہے کہ ٹر یڈ بادیز کے انتخابات کے خوش اسلوبی سے انعقاد کے لیے اسی غیر منطقی اور غیر قا نو نی تجو یز کو فوری طور پر واپس لیا جا ئے۔ اگر وزارت اسی شکایت اور حقیقی مطا لبے پر تو جہ دینے میں نا کام رہتی ہے تو مختلف لا ئحہ عمل حتیٰ کہ قا نو نی چارہ جوئی پر بھی غور کیا جا سکتا ہے تا کہ ملک کی ٹر یڈ با ڈیز کے آزادانہ انتخابی عمل کی تکمیل بغیر کسی رکا وٹ کے مکمل ہو۔