جھالاوان میں قوم پرست جماعت کے سربراہ آگ و خون چاہتا ہے : سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناءاللہ خان زہری

انجیرہ : سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناءاللہ خان زہری کا  قبائلی عمائدین اور پارٹی رہنماء و کارکنوں کے ہمراہ پریس کانفرنس میں    پاکستان، افغانستان، خلیج ممالک سمیت دنیا بھر میں مقیم زہری قبیلے کا جرگہ بلانے کا عندیہ۔ نواب ثناء اللہ زہری کا رواں زہری واقعہ سے لاتعلقی کا اظہار اور قوم پرست جماعت کے سربراہ پر شدید تنقید۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہیں نے کہا کہ  جھالاوان میں قوم پرست جماعت کے سربراہ آگ و خون چاہتا ہے،قوم پرست جماعت کے سربراہ اس حد تک آگے نہ جائے کہ میں اپنے قبیلے کے افراد کو روک روک کر بے بس ہوجاؤں،میرے خاندان اور قوم کی اتنی قبریں بننے کے باوجود قوم پرست کے سربراہ کا دل نہیں بھرا،نوابزادہ امان اللہ خان زہری کے قتل سے میرا کوئی تعلق نہیں، نوابزادہ امان اللہ خان زہری کی اپنے ہی ایک سو دشمنیاں تھیں،میرے وزارت اعلیٰ کے دور میں نوابزادہ امان اللہ زہری خود عدالتوں سےاشتہاری تھا، میرے دور حکومت میں ان کی گرفتاری نہیں ہوئی،  اپنے دور حکومت میں نہ انھیں گرفتار کروایا اور نہ ہی کوئی ایسا اقدام اٹھایا،اپنے دور حکومت میں ایسا کوئی اقدام اٹھایا تو کیونکر اب اٹھاوٗنگا۔