کراچی کی فضا کے الیکٹرک مردہ باد کے نعروں سے گونج اٹھی ۔ جگہ جگہ احتجاج ٹائر نذر آتش ، ٹریفک بلاک ، کے الیکٹرک انتظامیہ خاموش تماشائی

کراچی کی فضا کے الیکٹرک مردہ باد کے نعروں سے گونج اٹھی ۔ جگہ جگہ احتجاج ٹائر نذر آتش ، ٹریفک بلاک ، کے الیکٹرک انتظامیہ خاموش تماشائی

کراچی (رپورٹ:محمد نعمان اشرف) کے الیکٹرک نے دیر رات غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ معمول بنا لی،بعض علاقوں میں رات 2 بجے بند ہونے والی بجلی صبح بحال کی جاتی ہے ،رات کو غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے شہری ذہنی اذیت میں مبتلا ہونے لگے ہیں


،رات کو سونے کے اوقات میں لوڈ شیڈنگ سے سخت گرمی کے باعث شہری راتیں جاگ کر گذارنے پر مجبور ہیں۔کراچی کے مختلف علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 14 گھنٹے سے تجاوز کرگیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق شہر میں مارکیٹیں جلدی بند ہونے کے باوجود کے الیکٹرک کراچی کے شہریوں کو بجلی فراہمی میں ناکام ہوگئی ہے ،شہر کے مختلف علاقو ں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 14گھنٹے سے تجاوز کرگیا ہے ،کے الیکٹرک نے کراچی کے مختلف علاقوں میں دیر رات غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کرنا معمول بنا لیا ہے ،کراچی کے متعدد علاقوں میں رات 12 بجے کے بعد غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع کیا جاتا ہے جو صبح تک جاری رہتا ہے ،غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے شہری دہری اذیت میں مبتلا ہوگئے ہیں ،صبح کے اوقات دفتر جانے والے شہری بھی رل گئے ہیں ،امت سروے کے مطابق صدر،لائنزایریا،کالا پل،بزرٹہ لائن ،جیکب لائن اور جٹ لائن کے علاقوں میں 14گھنٹے سے زائد کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے ،متاثرہ علاقوں میں دن کے اوقات تین بار ساڑھے 3گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے اس کے علاوہ رات 2 بجے کے بعد 3گھنٹے مزید بجلی بند کردی جاتی ہے ،ان علاقوں میں رات 3 بجے کے بعد غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع کی جاتی ہے جو صبح تک جاری رہتی ہے ،شدید گرمی اور حبس میں لائٹ نہ ہونے سے شہری گرمی سے بلبلا اٹھے ہیں ،

لیاقت آباد،نیو کراچی ،ناظم آباد،گلبرک کے علاقوں میں بھی 12گھنٹے سے زائد کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے ،متاثرہ علاقوں میں رات 2 بجے کے بعد بجلی بند کردی جاتی ہےجو کئی گھنٹوں بعد بحال ہوتی ہے ،کھارادر،میٹھادر اور لیاری کے علاقوں میں بھی گھنٹوں لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے ،لیاری کے مختلف علاقوں میں دن کے اوقات 3گھنٹے سے زائد کی لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے تین بار اور رات کو بند کی جانے والی بجلی صبح کے وقت بحال ہوتی ہے ،لیاری کے شہری محمد آیاز نے امت کو بتایا کہ کے الیکٹرک شدید گرمی اور حبس میں گھنٹوں لائٹ بند کررہی ہے ،دوپہر کے اوقات شدید گرمی ہوتی ہے ،گھر آو تو بجلی ہی نہیں ہوتی ،ہم نے کئی بار ان کے خلاف احتجاج کیا ہے لیکن کے الیکٹرک انتظامیہ اپنا قبلہ درست نہیں کررہی ہے ،ساری رات علاقے میں بجلی بند ہوتے ہی اب لگتا ہے ان کے خلاف دوبارہ احتجاج کرنا پڑے گا،بزرٹہ لائن کے شہری محمد وقاص نے بتایا کہ رات 12 بجے کے بعد علاقے میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے ، رات 2 بجے علاقے کی بجلی بحال ہوتی ہے جو ایک گھنٹے بعد واپس چلی جاتی ہے ،بعض اوقات رات 3 بجے جو بجلی بند ہوتی ہے وہ صبح 8 بجے بحال ہوتی ہے پھر صبح 10 بجے چلی جاتی ہے ،کے الیکٹرک صرف 3 گھنٹے کے لیئے بجلی دے رہی ہے اور ہزاروں روپے کا اضافی بل بھیج رہی ہے ،دوسری جانب شہریوں کا کہنا ہے کہ سخت گرمی میں رات 2 بجے سے صبح تک لوڈ شیڈنگ سے رات کی نیندیں حرام ہوگئی ہیں،نیند پوری نہ ہونے کے باعث صبح کے اوقات میں ملازمت پر فرائض انجام دینے میں بھی مشکلات کا سامنا ہے۔شہریوں نے حکام بالا سے مطالبہ کیا ہے کہ رات کو سونے کے اوقات میں لوڈ شیڈنگ نہ کی جائے۔
https://ummat.net/2022/06/26/767750/

========================================

کراچی میں بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے ستائے شہری سڑکوں پر نکل آئے۔

صدر پریڈی اسٹریٹ، جوبلی مارکیٹ، لیاقت آباد ڈاک خانہ، شاہ فیصل کالونی، سرجانی ٹاؤن، یونیورسٹی روڈ، کالا پل، جہانگیر روڈ، ایم ٹی خان روڈ، نشتر روڈ اور ماڑی پور سمیت 14 مقامات پر شہریوں نے احتجاج کیا۔

کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کے ستائے شہری سڑکوں پر
شہر کے کئی مقامات پر ہونے والے مظاہروں کے دوران شہریوں کی جانب سے ٹائر جلا کر سڑکیں بند کردی گئیں جس سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا۔

مختلف علاقوں میں بجلی کی طویل بندش کے باعث پانی کی فراہمی بھی متاثر ہورہی ہے۔

واضح رہے کہ کراچی کے کئی علاقوں میں گرمی کی شدت میں اضافے کے بعد لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بڑھا دیا گیا ہے۔

دوسری جانب ملک بھر کے چھوٹے بڑے شہروں میں بھی بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہوگیا ہے۔


ملک بھر میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہوگیا

ذرائع کا کہنا ہے کہ شہروں اور دیہات میں دورانیہ 6 سے 8 گھنٹے سے تجاوز کرگیا ہے۔ بجلی کی طلب 28000 میگاواٹ سے تجاوز کرگئی جبکہ پیداوار 22500 میگاواٹ کے لگ بھگ ہے۔
https://jang.com.pk/news/1104474

===================================================

کراچی میں بدترین لوڈشیڈنگ‘ شہری سڑکوں پر نکل آئے
28 جون ، 2022
FacebookTwitterWhatsapp
کراچی(اسٹاف رپورٹر) کے الیکٹرک کی جانب سےشہر بھر میں بد ترین غیر اعلانیہ اور طویل لوڈشیڈننگ کے خلاف مختلف علاقوں میں شہری سڑکوں پر نکل آئے‘ مشتعل افراد نے احتجاج کے دوران راستے بند کردئیے، جس کے نتیجے میں بدترین ٹریفک جام ہو گیا،مظاہرین نے احتجاج کے دوران موجودہ اتحادی حکومت کے خلاف شدید نعرے لگائے اور پتلے جلا ئے ،شہر کی اہم شاہراہوں پر احتجاج کے باعث پورے شہر میں ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا، منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے کیا گیا ۔۔تفصیلات کےمطابق رامسوامی، عثمان آباد ، غازی نگر ، حسن لشکری ولیج اور نیوکمہارواڑہ میں بھی بجلی کی 14گھنٹے لوڈشیڈنگ کی خلاف علاقہ مکین سڑکوں پر نکل آئے ، ٹائر جلا کر راستے بلاک کردیئے، علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ شدید گرمی میں جہاں طویل لوڈشیڈنگ نے زندگی اجیرن کردی ہے وہیں پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں ۔طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف ہجرت کالونی اور سلطان آباد کے مکینوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا، مشتعل افراد نے ماڑ ی پور روڈ کے دونوں ٹریک، پی آئی ڈی سی پل ایم ٹی خان روڈ ٹریفک کے لیے بندکردیا گیا ، جس کے نتیجے میں گاڑیوں کی طویل قطاریں لگ گئیں ،جہانگیر روڈکے اطراف کے مکینوں نے بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدم فراہمی پر احتجاج کرتے ہوئے جہانگیرروڈپر دھرنادیدیا ،جس کے باعث تین ہٹی سے گرومندرآنے وجانے والی شارع پر ٹریفک معطل ہوگیا‘اطلاع ملنے پر پولیس اوررینجرز کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور مشتعل مظاہرین کو مذکرات کےبعد منتشر کرکے ٹریفک کی روانی کو بحال کردیا۔اولڈسٹی ایریا کے مکینوںنے بھی بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدم فراہمی پراحتجاج کرتے ہوئے نشتر روڈ رامسوامی پیٹرول پمپ کے سامنے دھرنا دیا ،جسکے باعث نشتر روڈ پر ٹریفک کی روانی معطل ہوگیا ،گارڈن مین چڑیا گھر کے قریب علاقہ مکینوں نے غیراعلانیہ طو یل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدم فراہمی پر احتجاج کر کے سڑک پر دھرناد یا ،جس کے باعث گارڈن لو لائن برج اور جمن شاہ مزار کے اطراف کی شاہراہوں پر بدترین ٹریفک جام ہوگیا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی، نیوپریڈی اسٹریٹ پارکنگ پلازہ کےسامنے صدر کےمکینوں نے بھی بجلی کی غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدم فراہمی کے خلاف احتجاج کیا اور پریڈی اسٹریٹ پر دھرنا دیا ، سرجانی ٹاؤن کے مکینوں نے کے ڈیاے فلیٹس کے سامنے بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدمفراہمی پر احتجاج کیا جبکہ کورنگی اللہ والا ٹاؤن ،بلوچ کالونی ،لیاری،اورنگی ٹاؤن سمیت شہر کے دیگر علاقوں کے مکینوں نے غیر اعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی عدم فراہمی پر کراچی واٹراینڈسیوریج بورڈ کے خلاف احتجاج کیا ۔

https://e.jang.com.pk/detail/167585
==============================================

ڈیفنس اور عزیز آباد اسٹیشن پر آج شٹ ڈاؤن رہے گا، کے الیکٹرک ضروری مرمت و ترقیاتی کام کریگی
28 جون ، 2022
FacebookTwitterWhatsapp
کراچی( اسٹاف رپورٹر ) ڈیفنس گرڈ اور عزیز آباد گرڈ پر 28جون، بروز منگل کے- الیکٹرک ضروری مرمت اور ترقیاتی کام کرے گی جس کے باعث ڈیفنس گرڈ سے منسلک علاقوں میں صبح 9 سے دوپہر 2بجے، جب کہ عزیز آباد گرڈ سے منسلک علاقوں میں صبح 10سے دوپہر 2بجے تک بجلی کی فراہمی عارضی طور پر معطل کی جاسکتی ہے۔ بجلی کی تنصیبات کی مرمت اور دیکھ بھال ایک ضروری امر ہے جسے مون سون کی بارشوں سے پہلے بروقت کرنا لازمی ہے، اسے موخر نہیں کیا جاسکتا۔ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق یہ ترقیاتی کام ہمارے ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک پر کرنے کے لیے ضروری ہے جس میں تاخیر نہیں کی جا سکتی ہے اور مون سون کی آمد سے پہلے اس کام کو سرانجام دینا ضروری ہے۔

===================