آئی سی یو میں ظہیر عباس کی طبیعت بہتر ہو رہی ہے، اہلیہ ثمینہ عباس

انتہائی نگہداشت کے وارڈ (آئی سی یو) میں داخل پاکستان کرکٹ ٹیم کے ماضی کے اسٹار بیٹسمین ظہیر عباس کی طبیعت بہتر ہو رہی ہے۔

سابق ٹیسٹ کرکٹر ظہیر عباس کی اہلیہ ثمینہ عباس نے لندن سے جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹرز نے ظہیر عباس کی بہتر نگہداشت کے لیے انہیں آئی سی یو میں رکھا ہوا ہے اور گردے کے علاج کے لیے خصوصی مہارت رکھنے والے کسی دوسرے اسپتال منتقل کیا جاسکتا ہے، تاہم ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔

اہلیہ ثمینہ عباس نے مزید بتایا کہ ظہیر عباس دبئی میں کورونا وائرس میں مبتلا ہوئے، ٹیسٹ کا نتیجہ منفی آنے پر لندن آئے تھے۔ جہاں اسپتال میں ڈائیلیسز پر ہیں اور انہیں آکسیجن بھی دی جارہی ہے۔

یاد رہے کہ 74 سالہ ظہیر عباس کو گزشتہ اتوار دبئی سے لندن پہنچنے کے بعد نمونیا کے سبب ایمرجنسی میں اسپتال پہنچایا گیا تھا۔

ظہیر عباس کو اپنی شاندار بیٹنگ کے سبب ’ایشین بریڈمین‘ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

کرکٹ کھیلنے کے علاوہ ان کے پاس یہ اعزاز بھی ہے کہ وہ 16-2015 میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے صدر بھی رہے۔

ظہیر عباس فرسٹ کلاس کرکٹ میں 100 سنچریاں بنانے والے اس کھیل کی تاریخ کے چند کرکٹرز میں سے ایک ہیں۔

انہوں نے 14 ٹیسٹ میچز میں پاکستان ٹیم کی کپتانی کے فرائض بھی انجام دیے۔