سندھ میں مون سون کی بارشوں کا سلسلہ شروع ہونے کے حوالے سے محکمہ موسمیات کی جانب سے میرپورخاص سمیت سندھ کے مختلف اضلاع میں تیز طوفانی بارشوں کی پیش گوئی کے باوجود میرپورخاص ضلعی انتظامیہ اور میونسپل کارپوریشن کے افسران کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ہیں

میرپورخاص == تحسین احمد خان === سندھ میں مون سون کی بارشوں کا سلسلہ شروع ہونے کے حوالے سے محکمہ موسمیات کی جانب سے میرپورخاص سمیت سندھ کے مختلف اضلاع میں تیز طوفانی بارشوں کی پیش گوئی کے باوجود میرپورخاص ضلعی انتظامیہ اور میونسپل کارپوریشن کے افسران کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ہیں حکومت کی جانب سے شہریوں کے مسائل کے حل کے لئے اربوں روپے کی لاگت سے


تعمیر کیا جانے والا ڈرینیج میگا پروجیکٹ کے نالوں سمیت دیگر نکاسی آب کے نالے اور نالیوں کی صفائی ستھرائی نہ ہونے کے باعث بارشوں سے قبل ہی ابل رہے ہیں شہر کے مختلف علاقوں کے ساتھ ساتھ شہر کی اہم شاہراہوں پر اکثر گندا پانی جمع رہتا ہے محکمہ موسمیات کے مطابق اگر تیز طوفانی بارشیں ہوتی ہیں تو شہر میں بڑی تباہی کا خطرہ ہے کروڑوں روپے کے فنڈز ہونے کے باوجود انتظامیہ نکاسی آب کے


نالوں اور نالیوں کی صفائی ستھرائی نہ کرنے کے باعث امکانی تیز بارشوں سے 2011 کی صورتحال پید اہونے کا خدشہ ہے واضع رہے کہ 2011 کی طوفانی بارشوں کے باعث برساتی پانی تین ماہ تک نکالا نہیں جا سکا تھا اس حوالے سے سیاسی،سماجی اور مذہبی رہنماؤ ں مولانا حفیظ الرحمن فیض،واجد لغاری،آصف معراج راجپوت اور دیگر عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ کی نااہلی کے باعث میرپورخاص شہر


ہمیشہ سے گندگی اور غلاظت کا ڈھیر بنا رہتا ہے بارشوں سے قبل نکاسی آب کی لائینوں کی صفائی ستھرائی کے لئے ضلعی اوت میونسپل کارپوریشن انتظامیہ کے پاس کروڑوں روپے کا فنڈز ہو تا ہے لیکن اس کے باوجود صفائی نہیہں کرائی جاتی ہے اربوں روپے کی لاگت سے تعمیر کیا جانے والا ڈرینیج میگا پروجیکٹ کے نالے پہلے ہی ابل رہے ہیں لیکن انتظامیہ نے چشم پوشی اختیار کی ہوئی ہے انھوں نے مطالبہ کیا کہ نکاسی آب کے نظام کو بہتر کیاجائے ٭٭
===========================