پانی کھپے پانی کھپے کے زور دار نعرے -نہریں سوکھی ہوئی ہیں انہوں نے کہاکہ نہروں میں پانی نہ ہونے سے فیض گنج میں 40فیصد اراضی پر کپاس کی فصل کاشت نہیں کی جا سکی


خیرپور -فیض گنج کی نہروں میں پانی کی کمی کے خلاف آبادگاروں کی احتجاجی ریلی شہر کے مرکزی چوک پر احتجاجی دھرنا پانی کھپے پانی کھپے کے زور دار نعرے تفصیلات کے مطابق خیرپور کی تحصیل فیض گنج کی 4بڑی نہروں فیض گنج واہ ، ویہو واہ، علی نواز واہ اور پندرہو واہ کی ٹیل میں پانی نہ ہونے کے خلاف آبادگاروں نے تعلقہ ہیڈ کوارٹر شہر پکا چانگ میں احتجاجی ریلی نکال کر شہر کے مرکزی چوک پر دھرنا دیا


احتجاجی ریلی کی قیادت کامران بلوچ، عبدالمالک چانگ، شعیب خان ، ضمیر حسین اور دیگر نے کی آبادگارریلی اور دھرنے کے دوران پانی کھپے پانی کھپے کے نعرے بلند کر تے رہے آباد گاروں کا کہنا تھا کہ فیض گنج کی نہروں میں پانی نہ ہونے کی وجہ سے دولاکھ ایکڑ سے زائد اراضی بنجر بن چکی ہے جس کے نتیجے میں کئی علاقے خشک سالی کا شکار ہو چکے ہیں انہوں نے کہاکہ سندھ کے حکمران جاگیں وفاق سے اپنے پانی


کا حق حاصل کریں دریائے سندھ میں پانی نہ ہونے سے سندھ بنجر ہو رہا ہے اورنہریں سوکھی ہوئی ہیں انہوں نے کہاکہ نہروں میں پانی نہ ہونے سے فیض گنج میں 40فیصد اراضی پر کپاس کی فصل کاشت نہیں کی جا سکی آگے چل کر گندم کی فصل کی کاشت میں بھی بڑی دشواری ہو گی۔

https://e.jang.com.pk/detail/159034
===============================================

بالائی علاقوں میں مون سون کی بارشوں کے بعد چشمہ بیراج پر پانی کی سطح بڑھنے لگی شدید قلت کے بعد رواں سال پہلی بار گڈو بیراج پر گذشتہ 24گھنٹوں میں 8ہزار کیوسک پانی میں اضافہ ہوا ہے۔انچارج کنٹرول روم سکھر بیراج عبدالعزیز سومرو کے مطابق بالائی علاقوں میں بارشوں کے باعث چشمہ بیراج اور دریاوں میں پانی کی سطح بڑھ رہی ہے جس سے سندھ کے بیراجوں گڈو اور سکھر بیراج پر پانی کی سطح میں اضافہ ہورہا ہے گزشتہ 24گھنٹوں میں گڈو بیراج پر 8ہزار اور سکھر بیراج پر 2ہزار کیوسک پانی کی سطح بڑھی ہے پانی میں اضافے کے بعد کوٹری بیراج اور سکھر بیراج کی کینالز میں پانی کی سطح میں اضافہ کیا جارہا ہے

=============================