پاپ بینڈ ’بی ٹی ایس‘ دولت کی لالچ کی وجہ سے ٹوٹ رہا ہے؟

معروف کورین پاپ بینڈ ’بی ٹی ایس‘ کے مشترکہ سرگرمیوں سے وقفہ لینے کے اعلان کے بعد سے بینڈ کی انتظامی کمپنی’ہائب‘ (Hybe) کو سوشل میڈیا پر تنقید کا سامنا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق، ایک طرف تو کورین پاپ بینڈ ’بی ٹی ایس‘ بطور بینڈ سرگرمیوں سے وقفہ لینے کے اعلان کے بعد سے اپنے مداحوں سے ہمدردیاں وصول کر رہا ہے، دوسری جانب بینڈ کو انتظامی کمپنی کے اسٹیک ہولڈرز کی جانب سے شدید غصّے کا سامنا ہے۔

سوشل میڈیا پر بھی پاپ بینڈ ’بی ٹی ایس‘ کے کچھ مداحوں نے بینڈ کی انتظامی کمپنی ’ہائب‘ (Hybe) پر الزام لگایا کہ کمپنی پاپ بینڈ پر نئے البمز بنانے اور پیسے کمانے کے دیگر مواقع حاصل کرنے کے لیے مسلسل زور دے رہی ہے۔

ان خبروں پر جنوبی کوریا میں بہت سے لوگوں نے مایوسی کا اظہار کیا ہے، جبکہ پاپ بینڈ جس نے اپنےحوصلہ افزا اور نوجوانوں کو بااختیار بنانے کے پیغامات سے عالمی سطح پر شہرت حاصل کی، اب اس کے مستقبل کے بارے میں بھی قیاس آرائیاں شروع ہوگئی ہیں۔

اس حوالے سے کم ینگ سن، نامی بینڈ کی مداح نے کہا کہ انہیں افسوس ہے کہ بطور مداح اُنہوں نے ایک ایسے وقت میں پاپ بینڈ سے امیدیں وابستہ رکھیں جب وہ مشکل وقت سے گزر رہے ہیں، بینڈ ممبرز مشترکہ سرگرمیوں سے وقفہ لینے کے حقدار ہیں۔

ایک مداح نے بینڈ کے بارے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ’میں سمجھ سکتا ہوں کہ وہ کیسا محسوس کر رہے ہیں‘۔
ایک اور مداح نے کہا کہ ’مشکل وقت میں اس بینڈ کی آواز نے مجھے بڑی طاقت اور ہمت دی، اور اب میں اس طرح کے سرپھرے لوگوں سے نہیں ڈرتا، اب میں اس بینڈ کو ہمت دینا چاہتا ہوں ‘۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز بینڈ کے رکن آر ایم نے اعلان کیا تھا کہ ابھی تمام بینڈ ممبرز مشترکہ سرگرمیوں سے وقفہ لے کر انفرادی پراجیکٹس پر توجہ دیں گے۔

اُن کا کہنا تھا کہ وہ بی ٹی ایس کے لیے مسلسل ریکارڈنگ اور پرفارمنس کے بجائے اپنے ذاتی کام پر توجہ مرکوز کرنے کی ضرورت محسوس کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ پاپ اور گلوکاری کا پورا نظام کچھ اس طرح ترتیب دیا گیا ہے کہ اس کے باعث اپنے لیے کچھ کرنے کا وقت ہی نہیں ملتا، اس نظام میں رہتے ہوئے صرف موسیقی اور اسی سے جڑی سرگرمیاں کرتے ہی رہنا ہوتا ہے، کسی دوسرے پراجیکٹ کے لیے وقت نہیں ملتا۔