کمشنر لاڑکانہ ڈویژن گہنور خان لغاری نے کہا ہے کہ موجودہ سندھ حکومت چاہتی ہے کہ عوام کو صحت کی بنیادی سہولیات میسر ہوں تاکہ انہیں کسی قسم کی تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے


لاڑکانہ۔ رپورٹ محمد عاشق پٹھان==========

کمشنر لاڑکانہ ڈویژن گہنور خان لغاری نے کہا ہے کہ موجودہ سندھ حکومت چاہتی ہے کہ عوام کو صحت کی بنیادی سہولیات میسر ہوں تاکہ انہیں کسی قسم کی تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے اور یہ اجلاس بلانے کا مقصد بھی لاڑکانہ ڈویژن میں صحت کے شعبے میں ملنے والی سہولیات اور مسائل معلوم کرنا ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے کمشنر آفس کے کمیٹی روم میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا، اجلاس میں انہوں نے محکمہ صحت


کے افسران پر زور دیا کہ وہ صحت کی سہولیات کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ ہسپتال میں داخل مریضوں کو مفت ادویات کی فراہمی کو یقینی بنائیں، اس موقع پر مسٹر لغاری نے محکمہ صحت کے عملے سے سوال اور جواب بھی کیے اور انہیں ہدایت کی کہ وہ مریضوں کا خاص خیال رکھیں، ماں اور بچے کی صحت پر زیادہ توجہ دیں، ساتھ ہی اسپتالوں میں صفائی ستھرائی، ڈاکٹروں اور طبی عملے کی موجودگی کو بھی یقینی بنایا جائے،


اس موقع پر محکمہ صحت کے عملداروں نے اپنے مسائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹروں اور دیگر عملے کی کمی ہے جس پر کمشنر نے ان سے کہا کہ وہ اپنے مسائل لکھ کر دیں تاکہ ان کو حل کیا جاسکے، کمشنر نے یہ بھی کہا کہ وہ اپنے اداروں میں زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں تاکہ ماحول کو بہتر بنایا جاسکے، اس سلسلے میں کسی قسم کی مدد درکار ہوتو مجھے بتائیں تاکہ انہیں پودے فراہم کیے جائیں۔


کمشنر نے رجسٹرار ایس ایم بی بی ایم یو کو گرلز ہاسٹل اور دیگر مقامات پر سی سی ٹی وی کیمروں کو یقینی بنانے کی ہدایات دیں، انہوں نے مزید کہا کہ میں نے لاڑکانہ میں دیکھا ہے کہ یہاں اچھے اچھے ڈاکٹرس موجود ہیں، اجلاس میں ایڈیشنل کمشنر ون قاضی سردار احمد، پرنسپل سی ایم سی ڈاکٹر گلزار احمد شیخ، ایم ایس سی ایم سی ڈاکٹر گلزار تنیو، رجسٹرار ایس ایم بی بی ایم یو سعید احمد، چلڈرن ہسپتال کے ایچ او ڈی، شیخ زید وومن ہسپتال کی انچارج اور دیگر نے شرکت کی، اس موقع پر محکمہ صحت کے افسران نے نقشوں اور چارٹس کے ذریعے بریفنگ بھی دی۔
—————————-