مہرین جبار کا پاکستانی ڈراموں کے معیار پر اظہارِ تشویش

معروف پاکستانی ہدایتکارہ مہرین جبار نے پاکستانی ڈراموں کے روز بروز خراب ہوتےمعیار پرسوال اُٹھا دیا ہے۔

مہرین جبار نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر پاکستانی ڈراموں کے روز بروز خراب ہوتے معیار پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

اُنہوں نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ’ہمارے اکثر ڈرامے انڈین سوپ اوپرا کی طرح کیوں ہو گئے ہیں؟‘
اُنہوں نے لکھا کہ ’خراب لائٹنگ، بیک گراونڈ میں چلنے والا میوزک، خواتین کے لیے پرفیکٹ بلو ڈرائیز، مردوں کے لیے وہی داڑھی والا حلیہ۔‘

اُنہوں نے مزید لکھا کہ’ ہر کوئی مسلسل صدمے میں اور چیختا ہوا نظر آرہا ہے یا رو رہا ہے اور کہانی کو زبردستی 1000 اقساط تک کھینچا جا رہا ہے۔‘

مہرین جبار نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ’کہاں کھوگئے وہ گزرے لمحے؟‘