شہری اس بات پر خوش ہیں کہ شرجیل میمن کے دن رات محنت اور شہریوں سے محبت نے شہر کو جدید لگژری بسو ں کا تحفہ دیا جبکہ شہر پر 30 سال حکمرانی کرنے والے یہ کام نہ کر سکے ۔


کراچی بھی رنگ برنگی جدید لگژری بسوں پر مشتمل آرام دہ سفری سہولتوں والے ٹرانسپورٹ نظام کی جانب رواں دواں

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
پاکستان دنیا میں آبادی کے لحاظ سے پانچواں بڑا ملک بن چکا ہے اور تیزی سے آبادی میں اضافے کی وجہ سے ہر اس ملک کو سخت چیلنجوں کا سامنا ہے جو اپنے تمام شہریوں کو بہترین اور جدید سہولتیں فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے ۔کراچی پاکستان کا سب سے

بڑا صنعتی اور تجارتی مرکز ہے یہاں بندرگاہیں بھی ہیں اور ہر سال یہاں ملک بھر سے اور دیگر ملکوں سے بھی لوگوں کی بڑی تعداد حصول روزگار اور بہتر معیار زندگی


اپنانے کے خواب لے کر کراچی کا رخ کرتی ہے لہذا کراچی کے انفراسٹرکچر پر ہر سال غیر معمولی دباؤ پڑتا ہے جہاں ہر سال آبادی میں اضافہ اور غیر مقامی افراد کے آنے کی شرح میں ریکارڈ اضافہ دیکھا جاتا ہے ۔صورتحال کا مقابلہ کرنے کے لئے بہت سے وسائل درکار ہیں لیکن صورتحال یہ رہی ہے کہ وسائل کم اور مسائل زیادہ ہیں اس لئے حکومتی سطح پر چیلنجوں کی بھی کوئی کمی نہیں ہے کراچی کی آمدن اور ٹیکس سے پورے ملک کی معیشت چل رہی ہے اس لیے کراچی کے انفراسٹرکچر کی بہتری بحالی اور جدت کے لئے تمام اسٹیک ہولڈرز کا کردار اہمیت کا حامل ہے


وفاقی حکومت ہو وفاقی ادارے ہو صوبائی حکومت اور ضلعی انتظامیہ سمیت کنٹونمنٹ بورڈز اور دیگر اداروں کی ذمہ داری ہے کہ شہر کی ترقی کے کاموں میں ایک دوسرے کا ہاتھ بٹائیں اور اپنے اپنے حصے کی ذمہ داریوں کو پورا کریں ۔
خوشی کی بات یہ ہے کہ سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت نے کراچی شہر میں ٹرانسپورٹ کے نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور یہاں جدید سہولتوں سے آراستہ لگژری بسیں اور مکمل ٹرانسپورٹ نظام وضع کرنے پر نہایت سنجیدگی سے کام تیز کر رکھا ہے جس کے مثبت اور حوصلہ افزا نتائج بھی سامنے آرہے ہیں کراچی کے لوگ پرانی کھٹارا بسوں اور چنگ چی رکشوں پر سفر کر کے تنگ آ چکے ان کے لیے ضروری ہے کہ جدید سفری


سہولتیں فراہم کی جائیں اس سلسلے میں پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری کے ویژن اور ہدایات کے مطابق وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ اور صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن شہر بلکہ پورے صوبے میں ٹرانسپورٹ کے نظام کو جدید سہولتوں سے آراستہ کرنے کے مختلف منصوبوں پر تیزی سے


کام کر رہے ہیں کراچی سے لاڑکانہ تک نئی بسوں کو اس سسٹم میں لایا جا رہا ہے کراچی میں جدید رنگ برنگی لگژری بسوں کے مختلف منصوبے تیزی سے آگے بڑھ رہے ہیں شہر میں گرین بسیں کامیابی سے چلائی جا رہی ہیں اورنج بسیں بھی شہر میں آ چکی ہیں اور اب ریڈ بسوں نے بھی آزمائشی مرحلہ طے کر لیا ہے آنے والے دنوں


میں مزید نئی بسیں کراچی کی سڑکوں پر دوڑتی نظر آئیں گی ۔صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن نے حال ہی میں ترکی کا دورہ بھی کیا ہے وہاں پر ٹرانسپورٹ منصوبوں کے حوالے سے اہم اجلاس اور ملاقاتیں ہوئی ہیں جن کے مثبت نتائج آنے والے دنوں میں سامنے آئیں گے ۔صوبائی سیکرٹری ٹرانسپورٹ حلیم شیخ بھی مختلف منصوبوں کو تیزی سے عملی جامہ پہنانے کی کوششوں میں مصروف ہیں محکمہ ٹرانسپورٹ کے افسران اور ملازمین اور ان سے


جڑی ہوئی دیگر کمپنیوں کے عملہ اور کنٹریکٹرز سب ان دنوں کراچی میں جدید ٹرانسپورٹ منصوبوں کو تیزی سے کامیاب کرنے کے لیے دن رات محنت کر رہے ہیں ایسے میں شہریوں کو ان کے ساتھ بھرپور تعاون کرنا چاہیے ۔
================================