ایک سو ساٹھ فلیٹوں اور 800 رہائش پذیر افراد کے بارے میں اسسٹنٹ کمشنر فیروز آباد کی رپورٹ ۔۔۔؟


چیز ڈیپارٹمنٹل اسٹور میں آتشزدگی کی وجہ سے سمیعہ برج ویو کے ایک سو ساٹھ فلیٹ اور 800 سے زائد رہائشی افراد کے بارے میں شہری فکر مند ہیں اور سرکار اپنی رپورٹ تیار کر رہی ہے ۔ اسسٹنٹ کمشنر فیروز آباد کی ڈیوٹی ہے کہ وہ تمام رپورٹ سے اعلی حکام کو آگاہی دیں ۔


ابتدائی رپورٹ کے مطابق عمارت میں ایک سو ساٹھ فلیٹ ہیں جن میں سے دو فلیٹ خالی تھے اور 158 فلیٹوں میں لوگ

رہ رہے تھے رہائش پذیر افراد کی تعداد 800 کے قریب بتائی گئی ہے ۔ آتشزدگی کے واقعے کے بعد

عمارت میں بجلی اور گیس کی فراہمی بند کی گئی ۔ مقامی لوگوں نے میڈیا کو بتایا کہ



دو دنوں سے یہاں پرتیل اسٹاک کیا جا رہا تھا بڑی تعداد میں ٹرکوں سے تیل اتارا گیا ۔
پی ٹی آئی کے رہنماؤں نے سوال اٹھایا ہے کہ پی ٹی آئی کی وفاقی حکومت نے سندھ کی صوبائی حکومت کو مقامی انتظامیہ کے لیے 40 فائرفائٹرز برینڈ نیو دیے تھے تو پھر آتشزدگی کے واقعات میں انہیں بروقت استعمال کیوں نہیں کیا جا رہا عام تاثر یہ ہے کہ یہ 40 فائٹرز عام طور پر خالی کھڑے رہتے ہیں ڈرائیور کے بغیر ۔ حالانکہ عملہ تنخواہ لے رہا ہے ۔


دوسری طرف انتظامیہ کا کہنا ہے کہ فائر برگیڈ کی تمام دستیاب گاڑیوں کو استعمال میں لایا گیا ان کے علاوہ بحریہ اور رینجرز نے بھی آگ بجھانے میں مدد دی واٹر بورڈ حکام نے بھی اپنے لوگوں کو اس کام پر لگائے رکھا اس کے باوجود آپ پر قابو پانے میں بہت وقت لگا ۔
==============================

چیس سپر اسٹور جیل چورنگی آتشزدگی کا واقعہ
-کمشنر کرا چی معائنہ کے لیے پہنچ گیے
ڈپٹی کمشنر شرقی ڈی جی پی ڈی ایم اے اور بلڈنگز کنٹرول کی بریفنگ
بلڈنگز کنٹرول اتھارٹی کی ٹیکنلکل کمیٹی نے ابتدائ انسپکشن کر لیا ہے
کمشنر کو کے بی سی اے کے بریفنگ
– آگ بجھنے کے بعد حتمی انسپیکشن کیا جا ے گا اور
حتمی رہورٹ تیار کی جاے گی بریفنگ


================================