ٹرین میں خاتون سے اجتماعی زیادتی کے واقعے میں تینوں ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا

زکریا ایکسپریس میں خاتون سے اجتماعی زیادتی کے واقعے میں ملوث تینوں ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا۔اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق ڈی ایس پی ریلوے ملتان حماد حسن مرزا نے دعویٰ کیا ہے کہ واقعے میں نامزد تینوں ملزمان گرفتار کر لیے گئے ہیں۔حماد حسن مرزا نے کہا کہ ملزمان کو سمندری، جہانیاں اور شورکوٹ سے گرفتار کیا گیا۔


گرفتار ملزمان کو کراچی پولیس کے حوالے کیا جائے گا۔ڈی ایس پی نے مزید بتایا کہ ریلوے ملتان پولیس کی جانب سے تفتیش جاری ہے،نامزد ملزمان نجی کمپنی کے ملازم ہیں جن کا ریلوے سے تعلق نہیں۔حماد حسن کا کہنا تھا کہ

نجی کمپنی منیجر کی معاونت سے ملزمان زوہیب اور زاہد سے تفتیش جاری ہے۔تیسرے نامزد ملزم عاقب سے بھی تفتیش ہو گی۔


خیال رہے کہ اورنگی ٹاؤن کی رہائشی خاتون کو دورانِ سفر ٹکٹ چیکر، انچارج اور ایک شخص نے زیادتی کا نشانہ بنایا۔

یہ ٹرین نجی شعبے کے زیر انتظام چلائی جا رہی ہے جس میں خاتون اپنے سسرال مظفر گڑھ سے کراچی جا رہی تھی، واقعہ میں ملوث ٹرین کا عملہ فرار ہو گیا۔ ریلوے پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر لیا۔بتایا گیا ہے کہ ایف آئی آر کے مطابق متاثرہ خاتون کا سسرال


مظفر گڑھ ہے، اس کے شوہر نے ڈیڑھ ماہ قبل طلاق دی اور وہ اپنے بچوں سے ملنے 26 مئی کو مظفر گڑھ پہنچی، 27 مئی کو واپس

زکریا ایکسپریس کے ذریعے کراچی کے لیے روانہ ہوئی، اسٹیشن پر خاتون کو ٹکٹ نہیں ملا۔


ٹرین میں اکانومی کلاس کا ٹکٹ بنوا کر سفر شروع کر دیا، ترین جب روہڑی سے روانہ ہوئی تو نجی شعبے کے ٹکٹ چیکر زاہد نے خاتون کو کہا کہ وہ اس کو اے سی بوگی کی برتھ لے کر دے سکتا ہے اور اس نے انچارج عاقب سے ملوایا اور اے سی بوگی کے ایک کمپارٹمنٹ میں لے گیا۔ بعدازاں اس نے خاتون سے دست درازی کی۔خاتون نے وہاں سے اکانومی بوگی میں جانے کی کوشش کی جس پر اسے جان سے مارنے کی دھمکی دے کر زیادتی کا نشانہ بنایا۔


بعدازاں انچارج بھی آگیا اور اس نے بھی خاتون کے ساتھ زیادتی کی۔اس کے جانے کے بعد ایک اور شخص کمپارٹمنٹ میں آیا اور اس نے بھی خاتون کے ساتھ زیادتی کی۔متاثرہ خاتون نے کراچی اسٹیشن پر پہنچ کر پولیس کو واقعے سے متعلق آگاہ کیا جس پر تھانہ ریلوے پولیس کراچی سٹی نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔سوشل میڈیا پر افسوسناک واقعے سے متعلق خبر سامنے آنے کے بعد صارفین کی جانب سے شدید ردِعمل کا اظہار کیا جا رہا ہے۔صارفین نے کہا کہ پولیس جلد از جلد ملزمان کو پکڑ کر عبرتناک سزا دیں تاکہ آئندہ اس طرح کا کوئی واقعہ نہ ہو۔
https://www.urdupoint.com/daily/livenews/2022-05-30/news-3149530.html
===========================