بچوں کے ادب کو فروغ دینے کیلئے کام کرنیکی اشد ضرورت ہے: کمشنر کراچی افتخار شالوانی

 کمشنر کراچی دفتر میں کونسل آف لائبریریز قائم کر دی گئی ہے :کمشنر کراچی
کراچی : کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے کہا ہے کہ بچوں کے ادب کو فروغ دینے کے لئے کام کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ حکومت ان نجی اداروں، غیر سرکاری تنظیموں اور مصنفین کی ہر ممکنہ حوصلہ افزائی کر نے کے لئے اقدامات کر رہی ہے۔ اس سلسلہ میں کمشنر کراچی دفتر میں کونسل آف لائبریریز قائم کر دی گئی ہے۔ پبلک لائبریریز کو بحال کر نے کے لئے مر بوط کو ششیں شروع کر دی گئی ہیں ۔ جس میں ممتا ز اہل قلم اور سرکاری اور غیر سرکاری لائبریریز سے تعلق رکھنے والے ماہرین شامل کئے گئے ہیں۔

برٹش کونسل لائبریری اورگوئٹے انسٹی ٹیوٹ کے نمائندے بھی شامل کئے گئے ہیں۔کونسل آف لائبریریز قائم کر نے کا مقصد کراچی میں پرانی اور عدم توجہی کا شکار لائبریریوں کو بحال کر نا اور مطالعہ کا کلچر پیداکر نے کے اقدامات کر نا ہیں وہ کراچی آرٹس کونسل میں بچوں کے ساٹھویں ادبی فیسٹول کے اعلان کے موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تجھے ۔ بچوں کا ادبی فیسٹول کراچی میں ادارہ علم و آگہی کے زیر اہتمام 7 اور8 اگست کو کراچی آرٹس کونسل میں منعقد ہو گا۔انھوں نے کہا کہ بچوں کے ادیبوں کو بچوں کے لئے نئی کتابیں لکھنے کی طرف راغب کر نے کی ضروت ہے ۔بچوں کے ادب کو فروغ دینے سے کتابوں کے کلچر کو فروغ ملے گا ۔ انھوں نے کہا کہ کراچی میں ہر علاقہ میں پبلک لائبریری بنائی جائے گی اور مرکز ی پبلک لائبریری کے لئے پیش رفت ہوئی ہے۔ لوگوں کے تعاون سے اقدامات کئے جارہے ہیں۔




انھوں نے کہا کہ بچوں کو مطالعہ کے مواقع نہیں ہیں۔ اسکولوں کو چاہئے کہ مطالعہ کا پیریڈمتعارف کرائیں بچوں کو کتابیں پڑھنے کی ترغیب دیں۔ اس سلسلہ میں انھوں نے اپنے مطالعہ کے شوق کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ انھےیں مطالعہ کا شو ق ان کے اسکول میں کتاب پڑھنے کی ترغیب ملنے کا نتیجہ ہے۔انھوں نے کہا معاثرہ کو لکھنے والوں اور پڑھنے والوں کی قدر اور عزت افزائی کر نی چاہئے اس سے معاثرہ میں لوگوں کو پڑھنے کی ترغیب ملے گی۔ اس موقع پر ڈائریکٹر چلڈرن فیسٹول اورفیسٹول کی نگراں اور ادارہ علم و آگہی کی ڈائریکٹر بیلا جمیل نے فیسٹول کی تفصیلات بتائیں۔ انھوں نے بتایا کہ کراچی میں دو روزہ چلڈرن لٹریری فیسٹول میں بیس سے زائد نئی بچوں کی کتابوں کی رونمائی ہوگی، مختلف ڈرامے دکھائے جائیں گے، اسٹوری سنانے کے اجلاس ہوں گے، مختلف موضوعات پر مذاکرے منعقد کئے جائیں گے۔




پپٹ شو بھی ہو گا مصنفین کی دستخط شدہ کتابیں فروخت کے لئے رعائتی قیمت پر دستیاب ہوں گی۔ فیسٹول میں اردو،انگریزی اور سندھی سمیت مختلف زبانوں کی کتابیں دستیاب ہوں گی فیسٹول میں ستار ایدھی کی زندگی کے بارے میں بچوں کی کتاب کی رونمائی ہو گی نصابی کتابوں کے موضوع پر خصوصی پینل گفتگو منعقد کی جائے گی جس میں امینہ سید اور دیگر اظہار خیال کریں گے۔ ملک بھر سے بچوں کے مصنفین شرکت کریں گے۔ نئی اور نوعمر مصنفہ زینب راشد، زبیدہ مصطفے ، عامرہ عالم، خالد انعم، اور ؛رومانہ حسین بھی شرکت کر رہی ہیں۔ اس موقع پر آرٹس کونسل کے صدر احمد شاہ، مہتاب راشدی، امینہ سید، ۱رومانہ حسین، شہناز رمزی، شیما کرمانی، زینب راشد اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔