پہاڑوں سے آنے والے سیلابی پانی کے نتیجے میں لیاری ندی میں پانی کی سطح بلند ہو رہی ہے ۔خطرہ بڑھ گیا ہے

کیرتھر پہاڑوں سے آنے والے سیلابی پانی نے کراچی میں داخل ہونے کے بعد تباہی مچادی ہے کراچی حیدرآباد موٹروے 2 کلومیٹر ڈوب چکی ہے جس کی وجہ سے ٹریفک کی روانی بری طرح متاثر ہوئی ہے پانی تیزی سے سپر ہائی وے سے ٹکرا کر نی سبزی منڈی اور دیگر ملحقہ آبادیوں کی طرف بڑھ گیا ہے سعدی ٹاؤن اور دیگر علاقوں میں بھی پانی جمع ہوگیا ہے لیاری ندی میں مسلسل پانی کی سطح بلند ہو رہی ہے اور خطرہ ہے کہ لیاری ندی سے گھروں میں داخل ہو سکتا ہے ۔پیچھے سے آنے والے پانی کی رفتار بہت تیز بتائی جاتی ہے اگر کراچی شہر میں مزید بارش ہوئی اور پانی لیاری ندی میں مزید جمع ہوگیا تو خطرہ بڑھ جائے گا حکومتی ادارے صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور حفاظتی اقدامات کیے جا رہے ہیں وزیر اعلی سندھ اور میئر کراچی سمیت دیگر اعلی حکام صورتحال سے باخبر ہیں اور حفاظتی اقدامات کے لیے آملہ مسلسل کام کر رہا ہے





اپنا تبصرہ بھیجیں