وزیراعظم عمران خان نے حامد میر کو ان فالو کر دیا، یہ میرے لئے اعزاز کی بات ہے : حامد میر

وزیراعظم پاکستان عمران خان ایک طویل عرصے سے مشہور صحافی تجزیہ نگار اور اینکر پرسن حامد میر کو ٹویٹر پر فالو کرتے آرہے تھے لیکن وزیراعظم کے دورے پر جب حامد میر نے ان کی حکومت کے حوالے سے تنقید کا سلسلہ تیز کر دیا تو اب وزیراعظم عمران خان نے حامد میر کو ٹویٹر پر اچانک ان فالو کر دیا ہے جس کے بعد یہ بحث چھڑ گئی ہے کہ آخر انہوں نے ایسا کیوں کیا جبکہ حامد میر کا کہنا ہے کہ میرے لیے یہ ایک اعزاز کی بات ہے کہ ایک سیاستدان جب اپوزیشن میں تھا تو مجھے فالو کرتا تھا لیکن جب حکومت میں آیا تو مجھے ان فالو کر دیا حامد میر کا کہنا ہے کہ میرا موقف ہے کہ میڈیا پر پابندیاں ہیں مگر وہ یہ بات ماننے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

[embedyt] https://www.youtube.com/watch?v=we9Cr2qXHxo[/embedyt]

سیاسی اور صحافتی حلقوں میں کہا جارہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کا انٹرویو روکے جانے کے بعد سے ہم امیر مسلسل پاکستان تحریک انصاف اور وزیراعظم عمران خان کے خلاف تلقین کر رہے تھے جب کہ سوشل میڈیا پر حامد میر کے خلاف بھی بہت کچھ کہا اور لکھا جا رہا تھا حامد میر کا کہنا تھا کہ انہیں دھمکیاں بھی دی جا رہی ہے لیکن وہ دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں ایک پیغام میں ہمیں بھی نہیں ہوا تو کہا تھا کہ او مجھے بھی جھوٹے مقدمے میں گرفتار کر لو لیکن یہ بتانا چاہتا ہوں کہ اگر آپ ہمیں گرفتار کرنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں یا صرف مطالبات کر رہے ہیں تو نہ تو دم کیا دی بنا ہی مطالبہ کریں بلکہ آ و اور گرفتار کرلیں۔




اس لئے میں تو گرفتاری کے لیے تیار ہوں اور ایک بات آپ کو بتانا چاہتا ہوں کہ میں جنرل مشرف نہیں ہوں جو گرفتاری کے ڈر سے پاکستان سے بھاگ گیا تھا الحمدللہ میں ایک سویلین پاکستانی ہوں قائد اعظم محمد علی جناح اور علامہ اقبال کا پیروکار ہوں اور میں آپ کے جھوٹے الزامات سے ڈرتا بھی نہیں ہوں۔