منشیات جیسی موذی لعنت سے نوجوان نسل کو محفوظ رکھنا ہو گا۔ عمران اسماعیل 

گورنرسندھ کا لیاری میں قائم شہید بینظیر اے این ایف ماڈل شہید بے نظیر ایڈیکیشن ٹریٹمنٹ ریہیبلٹیشن سینٹر لیاری کا دورہ

کراچی ۔   گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ معاشرہ کو منشیات جیسی موذی لعنت سے پاک کرنے اور نوجوان نسل کو اس سے محفوظ بنانے کے لئے اس گھناﺅنے کاروبار میں ملوث عناصر کو ہر صورت کیفر کردار تک پہنچایا جائے اس ضمن میں انسداد منشیات فورس (ANF) اہم کردار ادا کررہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے لیاری میں قائم اینٹی نار کوٹکس فورس کے زیر انتظام بنایا کیا شہید بے نظیر ایڈیکیشن ٹریٹمنٹ ریہیبلٹیشن سینٹر لیاری کے دورے کے موقع پر کیا۔ اس مو قع پر ڈائریکٹر اے این ایف بریگیڈیئر منصور احمد ، حنید لاکھانی ، مہتا ب چاﺅلہ ، سردار یاسین ملک ،خرم موسیٰ ، فلم اسٹار سعود اور دیگر بھی موجود تھے ۔گورنر سند ھ نے کہا کہ منشیات کے خاتمہ، اس میں مبتلاءافراد کے علاج و معالجہ، اینٹی نا رکوٹکس فورس کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ منشیات نوجوان نسل کو دیمک کی طرح کھا رہی ہے ، اس موذی مرض میں سینکڑوں قابل، لائق ، ہونہار اور با صلاحیت نوجوان اپنا مستقبل تاریک کر چکے ہیں ہمیں اپنی نسل کو اس سے محفوظ رکھنے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھا نا ہو نگے اس ضمن میں حکومت ہر ممکن تعاون و وسائل فراہم کرے گی۔ گورنر سندھ نے کہا کہ اینٹی نا رکوٹکس فورس کا نہ صرف منشیات فروشوں کے خلاف سخت ایکشن جاری ہے بلکہ اس موذی مرض میں مبتلاءافراد کی دوبارہ بحالی کے لئے لیاری میں اسپتال کا قیام قابل تحسین ہے ،علاج و معالجہ کے بعد متعدد افراد منشیات چھو ڑ کر دوبارہ اپنی معمول کی زندگی گذارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ منشیات فروشوں کا اصل ہدف اسکولز ، کالجز اور یونیورسٹیز کے طلبہ ہوتے ہیں اس لئے تعلیمی اداروں کے اطراف بھی ان منشیات فروشوں پر سخت نظر رکھنا ہوگی۔ بے نظیر اے این ایف ماڈ ل سینٹر کے پروجیکٹ ڈائریکٹر کرنل (ر) ماجد شیرازی نے سینٹر کے بارے میں گورنر سندھ کو تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے

بتایا سینٹر 2010 میں قائم کیا گیا اور ابتک کئی ہزار مرد و عورت اور بچے اس سے فائدہ حاصل کرکے اپنی نئی زندگی کی شروعات کرچکے ہیں جبکہ صوبے بھر میں 23 مقامات پر میڈیکل کیمپ کے انعقاد کے علاوہ 69 مختلف اسکولوں ، کالجز اور دیگر مقامات پر آگاہی مہم بھی چلی گئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ہمارے سروے کے مطابق 20 سے 29 سال کے نوجوان سب سے زیادہ منشیات استعمال کررہے ہیں جو کہ تشویش نا ک بات ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ ان نوجوانوں کو مثبت سرگرمیوں کی طرف راغب کیا گیا اس ضمن میں اے این ایف بلدیہ اور کارنگی میں بھی اس قسم کے سینٹر قائم کرنا چاہتی ہے جس کے لئے مخیر حضرات اور حکومت کی توجہ مبذول کرنا ضروری سمجھتے ہیں ۔ کرنل (ر) ماجد شیرازی نے مزید بتایا کہ تقریباً 40 ملین روپے مخیر حضرات جبکہ اتنے ہی حکومت کی طرف سے گرانڈ دی گئی ۔ پی ڈی نے بتایا کہ مستقبل میں اے این ایف صوبے کے ہر اضلاع میں سینٹرز قائم کرنا چاہتی ہے جبکہ سکھر میں سینٹر نے کام کرنا شروع کردیا ہے اور جلد حیدرآباد میں بھی ایساہی سینٹر کام کرنا شروع کردے گا ۔ گورنرسندھ نے سینٹر میں داخل مریضوں سے فراہم کی جانے والی سہولیات کے حوالے سے تفصیلات حاصل کیں اس موقع پر متعلقہ حکام نے بھی گورنرسندھ کو سہولیات کے حوالے سے تفصیلی آگاہ کیا.