یہ دل مانگے مور … انور راتول کے ذائقے نے بھی دھوم مچادی … رپورٹ : طارق اقبال

کویت : کویت میں پاکستانی آم کی مختلف اقسام سندھڑی، چونسا، لنگڑا ،سہارنی کے بعد انور راتول نے بھی دھوم مچادی ، مارکیٹ میں ان دنوں انور راتول کے ہی چرچے ہیں، پاکستان بزنس سینٹر کویت کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر کویت میں میڈ ان پاکستان اور پاکستانی مصنوعات کے فروغ کے مشن پر عمل درآمد کر رہے ہیں ، یہ ان کی کاوشوں کا ہی نتیجہ ہے کہ کویت میں قرشی مصنوعات تقریباً تمام بڑی ہائپرز ،سپر مارکیٹس ،جمیعہ اور اسٹورز پر دستیاب ہیں ، 2015 تک پاکستانی آم کویت میں نایاب تھے، لوگ تحفہ کے طور پر پاکستان سے آتے ہوئے لے کر آتے تھے، 2015 میں کویت میں پاکستان بزنس سینٹر کے زیر اہتمام مینگو فیسٹول کا اہتمام کیا گیا جس میں مقامی اخبارات کے مطابق 50 ہزار افراد نے شرکت کی ،حافظ محمد شبیر اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کے نتیجہ میں امسال 30 جون کو کویت میں پانچویں سالانہ مینگو فیسٹول کا تاریخی انعقاد کیا گیا، حافظ محمد شبیر کویت میں پاکستانی مصنوعات کے حوالہ سے نئی تاریخ رقم کر رہے ہیں کیونکہ متعدد ایسی مصنوعات اور اشیاء موجود ہیں جنہیں تاریخ میں پہلی مرتبہ حافظ محمد شبیر نے ہی متعارف کرایا ،یہ کام حافظ محمد شبیر جیسا محب وطن شخص ہی کر سکتا ہے جسے جنون کی حد تک پاکستان سے محبت ہو، جب پاکستان اور پاکستانی مصنوعات کے چرچے دیار غیر میں سنتے ہیں تو سر فخر سے بلند ہوجاتا ہے ، ان کی کاوشوں کے نتیجہ میں اب کویت میں کوئی بھی آم کی بات کرے تو ذہن میں پاکستانی آم آجاتا ہے ،حافظ محمد شبیر کو یہ کامیابی مبارک ہو کہ وہ کویت کی مارکیٹ میں پاکستانی آم کا سکہ جمانے میں کامیاب ہو گئے ہیں ،ان دنوں پاکستانی آم انور راتول ہائپرز،سپرمارکیٹس،جمیعہ کے علاوہ پاکستان بزنس سنٹر پر ہمہ وقت دستیاب ہیں،پاکستان بزنس سینٹر کے سینئر منیجر راجہ ظفر اقبال سے کسی بھی وقت رابطہ کیجئے، کم از کم 10 باکس آرڈر پر فری ہوم ڈیلیوری کی سہولت بھی موجود ہے۔چونسا ،سہارنی کے بعد انور راتول بھی منفرد ذائقہ کا حامل ہے،جس کے بارے میں ہی کہا گیا ہے…..       یہ دل مانگےمور