احساس پروگرام میں شامل کرانے کا جھانسہ دیکر سادہ لوح مرد و خواتین کو لوٹنے کا سلسلہ شروع

پنجاب حکومت کی جانب سے شروع کئے جانے والے ” احساس پروگرام ” میں شامل کرانے کا جھانسہ دیکر سادہ لوح مرد و خواتین کو لوٹنے کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ نوسربازوں کی جانب سے سادہ لوح عوام کو گمراہ کر کے ان سے 100/ 200 روپے فی کس وصولی کی جا رہی ہے۔ ظاہر پیر اور گردونواح میں نیٹ کیفے اور فوٹو سٹیٹ کی دکانوں پر احساس پروگرام میں شامل کرانے کی فرضی درخواستیں لکھنے کی فیس الگ وصول کی جاتی ہے جبکہ ان درخواستوں کو وزیر اعلیٰ پنجاب کو بھجوانے کے الگ پیسے وصول کئے جانے لگے ہیں۔ اس منظم لوٹ مار پر کسی حکومتی نمائندہ یا کسی ادارہ نے تاحال کوئی ایکشن نہیں لیا۔ گھر کا چولہا جلانے کی سکت نہ رکھنے والے خاندانوں سے جعل سازی اور دروغ گوئی کرکے 100/200 روپے وصول کرنے والوں کو کیا نام دیں ؟؟؟ اندازہ لگائیں کہ مزدور پیشہ لوگ اپنے بچوں کا پیٹ کاٹ کر شدید گرمی میں لائن میں لگ کر لٹ رہے ہیں اور یہ لوٹ رہے ہیں مگر کوئی بولنے والا نہیں ہے۔ ڈی سی رحیم یار خان اور ڈی پی او رحیم یار خان  اس صورتحال کا نوٹس لیں اور ان نوسربازوں کے خلاف سخت کارروائی کریں۔




[embedyt]https://www.youtube.com/watch?v=3bgDy9yZWxY[/embedyt]