نصرت حارث پاکستان کی باوقار بااعتماد خوبصورت اور خوش گفتار مارننگ شو ہوسٹ … بیوی اور ماں بننے کے بعد زیادہ کامیابیاں اور شہرت سمیٹی

نصرت حارث نے وہ واقعہ بھی بتا دیا جسے یاد کرکے ان کے رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں
نصرت حارث مارننگ شوز میں شادی بیاہ ناچ گانے کے سخت خلاف ہیں
نصرت حارث نے شادی سے پہلے اپنے والد اور شادی کے بعد اپنے شوہر کی جانب سے ملنے والے اعتماد اور آزادی کی وجہ سے زندگی کو خوب انجوائے کیا
نصرت حارث پاکستان کی باوقار بااعتماد خوبصورت اور خوش گفتار مارننگ شو ہوسٹ … انہوں نے بیوی اور ماں بننے کے بعد زیادہ کامیابیاں اور شہرت سمیٹی ۔نصرت حارث نے وہ واقعہ بھی بتا دیا جسے یاد کرکے ان کے رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں، نصرت حارث مارننگ شوز میں شادی بیاہ ناچ گانے کے سخت خلاف ہیں۔نصرت حارث نے شادی سے پہلے اپنے والد اور شادی کے بعد اپنے شوہر کی جانب سے ملنے والے اعتماد اور آزادی کی وجہ سے زندگی کو خوب انجوائے کیا۔







جیوے پاکستان ڈاٹ کام سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ عام طور پر یہ خیال کیا جاتا ہے کہ شادی کے بعد لڑکی کا کیریئر ختم ہو جاتا ہے لیکن میرے ساتھ ایسا نہیں ہوا اور یہ تاثر غلط ثابت کیا جس طرح شادی سے پہلے میرے والدین بالخصوص میرے والد نے مجھ پر بے پناہ اعتماد کرتے ہوئے مجھے اپنے تمام شوق پورے کرنے کا بھرپور موقع دیا اسی طرح شادی کے بعد میرے شریک حیات نے مجھے کسی کام سے نہیں روکا اور میں اپنی مرضی سے اپنے کیریئر کے فیصلے کرتی ہو ں اور اللہ تعالی نے مجھے بے پناہ کامیابیاں عطا فرمائے جس پر میں اللہ تعالی کی بہت شکر گزار ہوں اور اپنا ساتھ دینے پر اپنے شوہر اپنے والد کی مشکور ہوں اور اس حوالے سے خود کو خوش نصیب سمجھتی ہوں ۔یہ بات بھی سچ ہے کہ اتنی کامیابیاں مجھے شادی اور بچوں کے بعد ملی ہیں عام طور پر لڑکیوں کو ایسا کیریئر کم ہی نصیب ہوتا ہے لیکن اس میں اللہ کا کرم اور اتنی محنت اور سوچ کا بھی بڑا دخل ہوتا ہے ۔میڈیا انڈسٹری میں عام طور پر یہ خیال کیا جاتا ہے کہ شادی کے بعد آپ کی اہمیت کم ہو جاتی ہے لیکن میرے ساتھ یہ معاملہ نہیں ہوا بلکہ میں نے تو میڈیا انڈسٹری میں قدم ہی شادی کے بعد رکھا اور مجھے قدم قد م پر کامیابیاں ملی اور شہرت حاصل ہوئی ۔میرے شوہر حارث کا ٹیکسٹائل اور ریئل اسٹیٹ کا بزنس ہے۔








اس کے علاوہ ہم دونوں نے مل کر ایک کمپنی  ’’ایونٹ کو‘‘کے نام سے بنائی ہے جس میں ہم پی آ ر ، پروڈکشن اور بزنس ڈویلپمنٹ وغیرہ کا کام کرتے ہیں ۔میرے شوہر حارث اور ہمارے تین بچے حمزہ ، عائزہ اور محمد ، ہماری کل کائنات ہیں اور ہم اپنی زندگی میں بے حد خوش ہیں۔بچپن کراچی میں گزرا۔گرا مر فالکن سکول سے ابتدائی تعلیم حاصل کی پھر بی کا م کا ا متحان شادی کے بعد دیا اس کے بعد انگریزی ادب میں ماسٹرز کیا اور اب بزنس ایڈمنسٹریشن میں ایم بی اے کر رہی ہو ں۔میڈ یا میں ا بت د ا م میں بزنس سیکٹر میں کام کیا اور اس کے بعد رمضان نشریات میں تین میںزبانوں میں سے ایک میزبان کی حیثیت سے مجھے کام کرنے کا موقع ملا میرے کام کو پسند کیا گیا اور آگے جاکر مجھے مارننگ شو کی میزبانی کے لیے چن لیا گیا اور میں نے اس ملنے والے موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنی صلاحیتوں کے اظہار کے لئے اس پلیٹ فارم کو اللہ کی دین سمجھا اور پوری محنت اور دیانتداری کے ساتھ کام کیا میں سمجھتی ہوں کہ گھوم پھر کر میں اس جگہ پہنچی بنا ورنہ چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ بننے کا خواب ہے جو راستے میں ہی رہ گیا دراصل اللہ تعالی آپ سے کسی شعبے میں جب کوئی کام لینا چاہتے ہیں تو آپ کو اس شعبے میں بھیج دیتے ہیں میں ۔









سمجھتی ہوں کہ مارننگ شو کے ذریعے میں لوگوں میں بھلائی اصلاح اور معاشرے میں بہتری کے لیے اپنا کردار ادا کر سکتی ہوں اور اس کے لئے اپنی کوشش کرتی رہتی ہو ں ۔ مجھے والدین کی اکلوتی اولاد ہونے کی وجہ سے بے پناہ محبت توجہ اور آزادی ملی یہ میری خوش قسمتی تھی ۔میرے والد ایک وکیل ہیں اب پریکٹس نہیں کرتے ۔میری والدہ ایک گھریلو خاتون ہیں ۔ہمیشہ سے ہی گھر میں بہت اچھا ماحول ملا ۔ابتدا میں مجھے خبریں پڑھنے کے لیے موقع ملا لیکن میں نے ایک مہینے میں ھی یہ فیصلہ کر لیا تھا کہ میرا یہ کام نہیں ہے اس کے بعد بزنس سیکٹر کے پروگرام سکیے ۔شا ہ زیب خانزادہ بھی میرے ابتدائی کیریئر کے ساتھی ہیں اور آج بھی مجھے بھابھی کہتے ہیں ۔مجھے اپنے کیریئر میں اچھے ساتھی اور دوست ملے۔میڈیا انڈسٹری ایک مشکل اور چیلنجنگ انڈسٹری ہے یہاں آپ کو اب ٹوڈیٹ رہنا پڑتا ہے اگر آپ کرنٹ افیئرز پر نظر رکھتے ہیں آپ کو مطالعہ کا شوق ہے آپ اپنے اردگرد کے حالات و واقعات اور علاقائی اور عالمی واقعات سے باخبر رہتے ہیں تو آپ کو زیادہ مشکل نہیں ہوتی یہ آپ کی اپنی لگن دلچسپی محنت ذہانت و صلاحیت پر منحصر ہے کیا آپ اپنے کیرئیر میں آنے والے چیلنجز کا مقابلہ کتنی ہمت اور کامیابی سے کرتے ہیں ۔