انگلینڈ میں افغان سیکورٹی کا مسجد میں پاکستانیوں کو نماز کی اجازت دینے سے انکار کے بعد کیا ہوا ؟

انگلینڈ میں افغانیوں کا اپنی مسجد میں پاکستانیوں کو نماز کی اجازت سے انکار ، یہ کوئی فرقہ واریت کا مسئلہ نہیں تھا، انہیں تمام فرقوں کے پاکستانیوں پر اعتراض ہے۔مسجد کے باہر سیکیورٹی اہلکار نے پاکستانی نمازیوں کو اندر جانے سے روکا تو اس کے بعد کافی تکرار ہوئی بار بار اندر جانے کی اجازت مانگی گئی،

[embedyt]https://www.youtube.com/watch?v=3bgDy9yZWxY[/embedyt]

بتایا گیا کہ اندر جا کے نماز ادا کرنی ہے لیکن سیکیورٹی اہلکار یہ کہتا رہا کہ آپ اندر نہیں جا سکتے آپ کو اجازت نہیں ہے آپ اندر نہیں جا سکتے ۔سیکورٹی اہلکار کو بتایا گیا کہ یہ اللہ کا گھر ہے مسجد ہے یہاں کوئی بھی نماز پڑھ سکتا ہے آپ کیسے روک سکتے ہیں ۔پھر وہاں پر مزید نمازی جمع ہوتے گئے ان میں افغان نمازی بھی آگئے اور انہوں نے سیکورٹی والے کو کہا کہ اللہ کا گھر ہے کوئی بھی نماز پڑھ سکتا ہے تم کیسے روک سکتے ہو لیکن وہ سکیورٹی اہلکار اپنی ضد پر قائم رہا جس کے بعد نمازیوں کا غصے کی حالت میں جھگڑا ہوگیا اور سکیورٹی اہلکار کے ساتھ گتھم گتھا ہو گئے اس واقعے کی ویڈیو منظر عام پر آگئی۔