شہباز شریف نے عمران خان کے قومی اسمبلی میں پہنچتے ہی انہیں سلیکٹڈ وزیراعظم قرار دے دیا : ایوان میں ہنگامہ

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف مسلم لیگ نون کے رہنما شہباز شریف نے وزیراعظم عمران خان کے قومی اسمبلی میں پہنچتے ہیں انہیں سلیکٹڈ وزیراعظم قرار دے دیا جس پر ایوان میں ہنگامہ برپا ہوگیا ۔اسپیکر نے وزیراعظم کے لیے لفظ سلیکٹڈ استعمال کرنے پر پابندی لگا رکھی تھی لیکن وزیراعظم جیسے ہی اپنی نشست پر آئے شہباز شریف نے کھڑے ہو کر اپنی تقریر میں انہیں سلیکٹڈ وزیراعظم کہہ دیا۔

[embedyt]https://www.youtube.com/watch?v=3bgDy9yZWxY[/embedyt]

سردار یار خان نے احتجاج کیا جس کے بعد اسپیکر نے لفظ سلیکٹڈ کو کارروائی سے حذف کردیا اور شہباز شریف کا مائیک بند کردیا گیا ۔ وزیر اعظم ایوان سے واپس چلے گئے، جب  واپسی کیلئے روانہ ہوئے تو اپوزیشن کے مخالفانہ نعروں نے انکا پیچھا کیا ۔تھوڑی دیر بعد وزیراعظم نے واپس آکر ایک مرتبہ پھر ایوان کی کارروائی میں حصہ لیا، لیکن جلد ہی دوبارہ واپس چلے گئے، اجلاس جمعہ کی صبح گیارہ بجے تک ملتوی کیا گیا،



سیاسی مبصرین کے مطابق وزیراعظم کو یقین دہانی  کرائی گئی تھی کہ ایوان میں کوئی ہنگامہ اور شورشرابہ نہیں ہوگا اسی لیے وہ آئے تھے سینئر سیاسی تجزیہ نگار کے مطابق وزیراعظم کو اعتماد دلایا گیا تھا کہ ان کے خلاف لفظ سلیکٹڈ استعمال نہیں کیا جائے گا اور ایو ا ن میں سب کچھ قابو میں رہے گا لیکن ایسا نہ ہوسکا ۔سب سے پہلے شہباز شریف نہیں کھڑے ہوکر وزیراعظم کو سلیکٹڈ قرار دے دیا ۔