59

ماروی میمن، اسحاق ڈار کی پاکستان آمد کی منتظر

سابق وفاقی وزیر نثار میمن کی صاحبزادی اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی سابق چیئرپرسن ماروی میمن پر اعتماد ہیں کہ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار جلد پاکستان میں ہونگے۔سوشل میڈیا صارفین کے سوالات کے جواب میں ماروی میمن نے بڑے اعتماد سے کہا ہے کہ بہت جلد اسحاق پاکستان میں آئیں گے ۔یاد رہے کہ وفاقی حکومت کی طرف سے سابق وزیر خزانہ اور مسلم لیگ نون کے رہنما اسحاق ڈار کو گرفتار کرکے جلد پاکستانی کی کوششیں کی جارہی ہیں اس حوالے سے برطانوی حکومت کے ساتھ کچھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط بھی ہو چکے ہیں۔

پی ٹی آئی کے شہزاد اکبر دعویٰ کر چکے ہیں کہ اسحاق ڈار کی گرفتاری جلد عمل میں آئے گی انہوں نے پاکستان کے حوالے کیا جائے گا دوسری طرف اسحاق ڈار نے برطانوی ہوم ڈیپارٹمنٹ کا دورہ بھی کیا ہے جس کے بارے میں متضاد اطلاعات آ رہی ہیں پی ٹی آئی کے لوگوں کا کہنا ہے کہ اسحاق ڈار سیاسی پناہ حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور ممکنہ گرفتاری سے بچنا چاہتے ہیں لیکن اسحاق ڈار کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ سب افواہیں اور اسحاق ڈار نے ہوم ڈیپارٹمنٹ کا دورہ اس لیے کیا تھا کہ برطانیہ سے درخواست کریں کہ وہ پاکستان میں ان کے خلاف جاری منفی پروپیگنڈا کو روکے۔



یاد رہے کہ ماضی میں برطانیہ کی حکومت سیاسی بنیادوں پر گرفتاریوں کی مخالفت رہی ہے لیکن عمران خان کے برسراقتدار آنے کے بعد پاکستان کی حکومت نے برطانیہ سے بار بار مختلف شخصیات کو گرفتار کرکے پاکستان کے حوالے کرنے کے مطالبات کیے ہیں مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط بھی ہو چکے ہیں اس لیے حکومتی ذرائع کا دعوی کر رہے ہیں کہ بہت جلد اسحاق ڈار بھی ان شخصیات میں شامل ہوں گے جنہیں برطانیہ سے گرفتار کرکے پاکستان لایا جا سکے گا۔



سیاسی حلقوں میں یہ تاثر عام ہے کہ وفاقی حکومت ایمنسٹی اسکیم لانے اور معاشی ٹیم تبدیل کرنے کے باوجود معیشت کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کی کے حوالے سے سخت مشکلات کا شکار ہے اور ماضی کی لوٹ مار اور قرضوں کے حساب کتاب کے حوالے سے اسحاق ڈار کو اہم ترین شخصیت مانا جاتا ہے لہذا جب تک اسحاق ڈار پاکستان نہیں آئیں گے آپ کو مت سمجھتی ہے کہ لوٹی گئی دولت یا کرپشن کے ذریعے بھیجا گیا پیسہ جو باہر چلا گیا واپس لانے میں مدد نہیں مل سکتی اور اگر ایک مرتبہ اسحاق ڈار قابو میں آجائیں تو حکومت سمجھتی ہے کہ باہر بھیجا گیا پیسہ منی لانڈرنگ یا کرپشن یا لوٹ مار کی رقم واپس حاصل ہو سکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں