37

وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکج لولی پاپ سے کم نہیں ہے،مشیر اطلاعات، بیرسٹر مرتضیٰ وہاب 

کراچی میں پانی کے مسئلے کے حل کیلئے وفاقی حکومت، کے ایم سی اور سندھ حکومت مل کر کام کریں
کراچی -مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کا کراچی ترقیاتی پیکج لولی پاپ سے کم نہیں ہے وفاقی بجٹ میں ایک سو باسٹھ ارب کا کہیں ذکر نہیں ہے پی ایس ڈی پی سے کراچی کی کئی اسکیمیں نکال دی گئیں، سندھ حکومت دستاویز پر یقین کرتی ہے کل ایک اہم شخصیت نے میڈیا پر اس بات کا اعلان کیا کہ بیالیس ارب کراچی کے کاموں پر خرچ کررہے ہیںانیس اسکیموں کا ذکر کیا گیا جس کا کل حجم ایک سو باسٹھ ارب روپے کے بجائے ساڑھے بارہ ارب روپے بنتا ہے۔

گورنر صاحب کب تک کراچی والوں کے ساتھ مذاق کرینگے انیس میں سے تیرا اسکیمیں نواز دور کی ہیں، وہ سندھ اسمبلی کے میڈیا کارنر پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے مزید کہا کہ مدینے کی ریاست کے وزیراعظم نے کراچی کو صرف سوا تین ارب رو پے کی اسکیمیں دی ہیں وفاق نے کہا تھا کہ کراچی میں گرین لائن بس ہم اکیلے چلا لیں گے۔ لیکن پی ٹی آئی حکومت نے کراچی میں ایک بھی بس نہیں چلائی خدارا غلط بیانی کرنا چھوڑ دیں،کراچی والوں کے سامنے آپ بے نقاب ہوچکے ہیں انہوں نے کہا کہ کراچی کے تین اسپتال سندھ حکومت سے جو واپس لئے گئے لیکن انکے لئے وفاق نے بجٹ میں ایک ٹکہ نہیں رکھاکاغذی طور پر ان اسپتالوں کا کنٹرول وفاق نے سنبھال لیاہے لیکن اسکے باوجود سندھ حکومت نے ان تین اسپتالوں کے لئے ما لی سا ل 2018-19 سولہ ارب روپے مختص کئے ہیں۔



ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کل ہم نے وزیراعظم کے گھوٹکی دورے پر اعتراضات اٹھائے تھے۔اورہماری پریس کانفرنس کے بعد الیکشن کمیشن نے وزیراعظم گورنر اور وفاقی کابینہ ارکان کے خلاف انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا نوٹس لیا ہے ہمارے اعتراضات پر وزیراعظم اور گورنر سندھ کو شوکاز نوٹس مل چکا ہے۔ امید ہے الیکشن کمیشن شوکاز نوٹس تک محدود نہیں رہے گا مزید قا نو نی کاروائی بھی کر ے گی۔انہوں نے کہا کہ میئر کراچی کو گاڑی خریدنے کا اختیار ہے باہر گھومنے کا اختیار ہے۔ گھر خریدنے کا اختیار ہے پر کام کرنے کا اختیار نہیں ہے۔ سابق ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرا کا بیان ریکارڈ پر ہے اگر کسی سے بھی پوچھیں گے کراچی کو کس نے تباہ کیا آپ کو پتا چل جائے گا ہم نے کراچی میں ریکارڈ تر قیا تی کام کیے ڈرگ روڈ شاہراہ فیصل، پنجاب چورنگی سمیت شہر میں متعدد کام کرائے لیکن ایم کیوایم نے کراچی میں کوئی ترقیاتی کام نہیں بلکہ چائنہ کٹنگ کی انکی پہچان چائنہ کٹنگ سمیت دیگر غیر قانونی اقدام ہیں۔



ایک اور سوال کے جواب میں مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ کسی بھی رکن اسمبلی کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنا اسپیکر کا کام ہے گورنر سندھ نے سندھ اسمبلی اجلاس بلانے کی درخواست پر جعلی دستخط کا کہہ کر مضحکہ خیز اقدام کیامشیر اطلاعات نے پریس کانفرنس کے دوران بڑا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کے پانی کے مسئلے کے حل کے لئے وفاقی حکومت ، کے ایم سی اور سندھ حکومت مل کر کام کریں پانی کا مسئلہ شدید تر ہوتا جارہا ہے سمندر جیسی بڑی نعمت سے استفادہ کے لئے ملکر بیٹھنے کے لئے تیار ہیں سندھ حکومت ڈی سیلینیشن پلانٹ پر کام کررہی ہے انہوں نے کہا کہ پانی کے مسئلے پر سیاست سے گریز کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں