قومی اسمبلی سے شورشرابہ، ورلڈ کپ سے مایوسی، اچھی خبریں صرف عدلیہ سے آرہی ہیں، چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ

پاکستان کے چیف جسٹس جناب جسٹس آصف سعید کھوسہ کا کہنا ہے کہ ٹی وی پر قومی اسمبلی کی کارروائی دیکھی تو وہاں شو ر شر ا بہ نظر آتا ہے اور کاروائی دیکھ کر ڈپریشن ہوتا ہے اگر چینل چینج کرکے ورلڈکپ دیکھیں تو وہاں بھی مایوسی کی خبر ملتی ہے اچھی خبریں صرف عدلیہ سے آرہی ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں منعقد ایک تقریب میں ماڈل کریمنل ٹرائل کورٹس کے جوڈیشل افسران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ مجھے ماڈل کورٹس کے چیتے جج چاہیے آج ہمیں مزید 57ج ملے ہیں ماڈل کورٹس کا 5800 مقدمات کو اڑتالیس روزن مٹانا بڑی کاوش ہے پاکستان کے چھ اضلاع میں اب کوئی مقدمہ زیرالتوا نہیں ہے فیصلہ کیا ہے کہ پہلے فوجداری مقدمات کو ختم کرکے معاشرے کو بہتر کیا جائے۔

[embedyt] https://www.youtube.com/watch?v=ji6Vk0vVtyI[/embedyt]

انہوں نے کہا کہ ٹی وی پر پارلیمنٹ کی کارروائی دیکھو تو اپوزیشن لیڈر اور قائد ایوان کو بولنے نہیں دیا جاتا یہ دیکھ کر ڈپریشن ہوتی ہے معیشت کی خبریں سنو تو وہاں بھی مایوسی ملتی ہے مایوسی سے بچنے کے لئے چینل بدلو ورلڈکپ لگاؤ تو پھر مایوس کن خبر ملتی ہے بدقسمتی سے کسی ادارے سے اچھی خبریں نہیں آرہی ہمیں پریشان کن خبریں سننی پڑتی ہیں انہوں نے کہا کہ ہم اپنے اردگرد دیکھیں تو بین الاقوامی سطح پر بھی پڑوسی ملک افغانستان میں جنگ چل رہی ہے ایران پر بھی جنگ کے سائے منڈلا رہے ہیں ایسے حالات میں ہمارے معاشرے کا صرف ایک شعبہ ایسا ہے جہاں سے اچھی خبر آ رہی ہے اور وہ عدلیہ ہے۔