صحافی سمیع ابراہیم کو فواد چوہدری کے تھپڑ کا ڈراپ سین، وزیراعظم کا سمیع ابراہیم کو فون

سینئر صحافی سمیع ابراہیم کو وفاقی وزیر فواد چوہدری کے تھپڑ کا ڈراپ سین ہوگیا وزیراعظم عمران خان نے خود سمیع ابراہیم کو فون کر کے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کی اجازت نہیں دیں گے پاکستان تحریک انصاف کی قیادت کسی ایسے انفرادی فیل کی حوصلہ افزائی نہیں کرتی جس میں دانستہ یا غیر دانستہ طور پر کسی کی عزت نفس مجروح ہو حکومت اور میڈیا جمہوری عمل کے دو لازمی اور ملزوم جز و ہیں ۔نقطہ نظر کے اختلاف کو ذاتی اختلاف کی حد تک لے کر جانا کسی صورت مناسب نہیں۔



ادھر وفاقی وزیر فواد چوہدری نے بھی اس معاملے پر سمیع ابراہیم سے معافی مانگنے کا فیصلہ کرلیا ہے ان کے قریبی ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے اس صورتحال کا نوٹس لیا ہے اور وہ اس معاملے پر خوش نہیں ہوئے۔
ایک صحافی نے جب فواد چوہدری سے کہا کہ اس میں ابراہیم کو تھپڑ مارنے کے معاملے پر سوشل میڈیا پر مہم چل رہی ہے تو فواد چوہدری نے کہا کہ یہ کوئی انوپم کھیر نے دلیپ کمار والا تھپڑ تھوڑی ہے جس پر مہم چل رہی ہے ۔یہ معاملہ جلد ختم ہوجائے گا۔



یاد رہے کہ فیصل آباد میں شادی کی ایک تقریب میں فواد چوہدری نے سمیع ابراہیم کو تھپڑ مارا تھا جس پر انہیں کافی تنقید کا سامنا کرنا پڑا اس میں ابراہیم نے ان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے لیے تھانے میں درخواست جمع کرائی تھی اور کراچی پریس کلب سمیت ملک بھر میں صحافیوں کی جانب سے سمیع ابراہیم کی حمایت میں اور فواد چوہدری کے خلاف احتجاجی مظاہرے شروع ہو گئے تھے ۔وزیراعظم عمران خان نے صورتحال کا نوٹس لیا اور اسے ٹھنڈا کرنے کے لئے خود سمیع ابراہیم کو فون کر کے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا۔