80

حامد میر کو سرعام لٹکا نے کی پی ٹی آئی کے کارکن کی خواہش پر حامد میر کا جواب

پی ٹی آئی کے ایک کارکن کی جانب سے سینئر صحافی حامد میر کو سرعام لٹکا نے کے ٹوئٹ پر خود حامد میر کا زبردست جواب سامنے آگیا ۔حامد میر نے جواب دیا… آپ نے دو طاقتور حضرات کی تصاویر لگا رکھی ہیں ان سے کہیں مجھے سرعام لٹکا دیا جائے ۔لیکن یقین دلاتا ہوں کہ آپ کے محبوب مشرف کی طرح بھاگوں گا نہیں۔ حامد میر کی جانب سے پی ٹی آئی کے سوشل میڈیا صارفین کو ملنے والا بھرپور جواب مشہور ہو گیا ۔انہوں نے ٹوئٹر پر تحریک انصاف پر جان نچھاور کرنے والے صارف کو انتہائی معقول اور زبردست جواب دیا۔مذکورہ سوشل میڈیا صارفین نے پی ٹی آئی کی حمایت کرتے ہوئے لکھا تھا کہ پانچ ہزار لوگوں کی بجائے صرف ایک حامد میر کو اگر سرعام لٹکا دیا جائے اور لاش کو چالیس روز تک کرین سے نہ اتارا جائے تو تمام مسائل حل ہو سکتے ہیں کیونکہ یہ… 



چوروں اور غداروں کی تربیت گاہ یا نرسر ی یا سہولت کار ہے۔ 
حامد میر کے ایک ٹی وی پروگرام میں پی ٹی آئی کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے دعویٰ کیا تھا کہ شاہد خاقان عباسی جلد جانے والے ہیں اسحاق ڈار، علی عمران، سلمان شہباز ملک سے فرار ہوگئے ہیں نواز شریف کے دونوں بیٹے مفرور اور بیٹی ضمانت پر ہیں ملک بہتر حال میں تھا تو یہ سارے لوگ مفر و ر یا جیل میں کیوں ہیں ؟پیپلزپارٹی پر مقدمات نون لیگ کے دور میں بنائے گئے تھے گرفتاریاں اب ہو رہی ہیں ۔فیصل واوڈا کا یہ بھی کہنا تھا کہ اگر پانچ ہزار لوگوں کو پھانسی پر لٹکا دیا جائے تو سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا۔



حامد میر باربار فیصل آباد سے یہ بات پوچھتے رہے اور فیصل واوڈا بار بار یہی بات کرتے رہے کہ ہاں پانچ ہزار لوگوں کو پھانسی پر لٹکا دینے سے مسئلہ حل ہوجائے گا۔
اسی طرف وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا ہے کہ فیصل واڈا کی بات کو سنجیدگی سے نہ لیا جائے انہوں نے پانچ ہزار لوگوں کی پھانسی والی بات کسی اور پیرائے میں کی ہوگی لوگوں کا خیال ہوتا ہے کہ جو پانچ ہزار لوگ پھانسی لگیں گے اس میں ہم نہیں ہونگے بدقسمتی سے ان لوگوں نے تاریخ نہیں پڑھی ہوئی۔ دوسری طرف سیاسی حلقوں میں یہ اطلاعات بازگشت دے رہی ہیں کہ فیصل آباد کی ایک تقریب میں ایک وفاقی وزیر اور ایک سینئر صحافی کے درمیان تلخ کلامی کے بعد معاملہ بڑھ گیا اور وفاقی وزیر نے سینئر صحافی کو تھپڑ مار دیا۔



دوسری طرف وفاقی وزیر مراد سعید کا کہنا ہے کہ فریال تالپور کو نواز شریف کے دور حکومت میں بنائے گئے جعلی اکاؤنٹس کے مقدمے میں تحویل میں لیا گیا ہے فریال تالپور کو انکل نواز شریف کے دور میں جو مقدمات تھے انہیں میں گرفتار کیا گیا ہے لہذا پرچی والے چیئرمین کو پتہ ہونا چاہئے کہ پھپھو کیس میں گرفتار ہوئی ہیں ۔وفاقی وزیر مراد سعید کا کہنا ہے کہ پرچی والے حادثاتی چیئرمین ان کے والد اور چیئرمین کی پھوپھو سمیت کسی کے پاس بھی لوٹ مار کا جواب نہیں ہے ۔ان کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کے رہنما اور عہدے دار تم کیا بعد میں دی پہلے اپنے بڑوں کی لوٹ مار کا جواب قوم کو دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں