محمد عامر سے مقابلہ نہیں، بھارتی کپتان کوہلی کا اعلان

بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے اعلان کیا ہے کہ ورلڈ کپ میں پاکستان اور بھارت کا میچ ان کے اور محمد عامر کے درمیان مقابلے کی صورت میں نہیں ہوگا ۔اس میچ کو ایک ٹیم سے دوسری ٹیم کا میچ ہی سمجھا جائے ۔ورلڈ کپ کے اہم میچ سے پہلے پریس کانفرنس کے دوران بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان نے کہا کہ میرے سامنے جو بول بھی ہوتا ہے اگر اس کی کارکردگی اچھی ہے تو میں اسے کریڈٹ ضرور دیتا ہوں ہر ٹیم کے ساتھ پوری توجہ اور فوکس گھر کے کھیلنا ہوتا ہے کبھی کسی ایک بولر کے ساتھ مقابلہ ذہن میں نہیں رکھا سامنے عمر ہو یا کوئی پارٹی نہیں بولا اگر خراب شاٹ کھیلا تو کٹ جائے گی ۔سامنے محمد عامر ہوں یا ربادہ ۔اچھے بولر کی صلاحیت کا احترام کرنا ضروری ہے ۔پولی میں کہا کہ امید کرتا ہوں کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان میچ پورے پچاس پچاس برس کا ہو گا لیکن بارش کی وجہ سے اگر ایسا نہ ہوا تو پھر کبھی نیشن تبدیل کرنا ہوگا ایک سوال پر گولی کا کہنا تھا کہ شیکھر د ھو ن کا نہ ہونا ایک دھجکا ضرور ہے لیکن ان کی جگہ آنے والے کھلاڑی بھی اچھے ہیں کوہلی نے پاکستانی ٹیم کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی ٹیم میں اچھے کھلاڑی ہیں اس لئے میں چاہوں گا۔



دوسری طرف بھارتی میڈیا نے پاکستان کے فاسٹ بولر محمد عامر اور بابر اعظم کو بھارت کے لئے بڑا خطرہ قرار دیا ہے بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ اگر میچ میں بابر اعظم نے سنچری بنا دیں تو وہ ہیرو بن جائے گا بابر اعظم کا بدلہ چل گیا تو بھارت کے لئے مشکل ہو سکتی ہے بھارتی میڈیا کے مطابق محمد عامر کا روہیت شرما اور ویرات کوہلی سے زبردست مقابلہ ہو سکتا ہے۔
اتوار کو ہونے والے پاک بھارت میچ پر خطے کے کروڑوں لوگوں کی نظریں لگی ہوئی ہیں اسے ورلڈ کپ کا سب سے بڑا میچ بھی قرار دیا جا رہا ہے بھارتی اوپننگ بلے باز د ھون انجری کا شکار ہوگئے ہیں بھارت کی طرف سے شرما اور راہول ا ننگ کا آغاز کریں گے ۔بھارتی ٹیم میں کلدیپ یادیو کی جگہ محمد شامی اور کھلایا جا سکتا ہے ۔پاکستانی ٹیم ایک روز پہلے پریکٹس نہیں کر سکی کیونکہ گراؤنڈ میں بارش ہوگی میچ کے دوران بھی اسٹیڈیم بادلوں میں گھرا رہے گا اور بارش کی توقع بھی ہے بارش پاکستان اور بھارت کے میچ کو متاثر کر سکتی ہے۔



ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کے اب تک ہونے والے میچوں میں پاکستان اور بھارت سات مرتبہ آمنے سامنے آئے ہیں اور ہر مرتبہ بھارت کی ٹیم جیتی ہے پاکستان آج تک اپنی پہلی فتح کا منتظر ہے پہلے چار ورلڈ کپ ٹورنامنٹ میں پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں آمنے سامنے نہیں آ سکی تھی۔
پاکستان کرکٹ ٹیم کے کوچ مکی آرتھر کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم کسی کو بھی شکست دے سکتی ہے ورلڈ کپ کی میزبانی اور مضبوط ترین ٹیم انگلینڈ کو پہلے ہی پاکستان شکست دے چکی ہے پاکستانی کوچ کا کہنا ہے کہ میچ میں کامیابی کا دارومدار اچھی فیلڈنگ پر ہوگا پاکستانی کھلاڑی بغیر کسی دباؤ کے میدان میں اتریں گے پاکستان کی ٹیم مینیجمنٹ شعیب ملک کو ایک موقع اور دینا چاہتی ہے۔