میرپورخاص میں کرونا کے وار جاری گرلز کالج کے اسٹاف کے چار افراد کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں، گزشتہ روز 16 ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کے ٹیسٹ لئے گئے

میرپورخاص(تحسین احمد خان ) میرپورخاص میں کرونا کے وار جاری گرلز کالج کے اسٹاف کے چار افراد کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں، گزشتہ روز 16 ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کے ٹیسٹ لئے گئے تھے تفصیلات کے مطابق میرپورخاص میں کرونا نے دوبارہ سر اٹھانا شروع کر دیا ہے گزشتہ روز ابن رشد گرلز کالج کے اسٹاف کے 16 افراد کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں اسسٹنٹ پروفیسر پروین افغان، آئی ٹی ٹیچر فرین ہمدانی، لیڈیز کلرک عزرا فاطمہ اور کلرک حفیظ خاصخیلی کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں جو اپنے اپنے گھروں میں آئسولیٹ ہو گئے ہیں زرائع کے مطابق کالج کی پرنسپل عقیلہ روشن بھی چھٹی پر چلی گئی ہیں جبکہ کالج کی کک رخسانہ اور پیون آصف بلوچ کی طبعیت زیادہ خراب ہے ابن رشد گرلز کالج میں اسٹاف کے 90 لوگ تعینات ہیں جبکہ پانچ ہزار کے قریب مختلف کلاسسز کی طالبہ زیر تعلیم ہیں ٭٭

میرپورخاص( تحسین احمد خان ) حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات، بجلی، گیس، کھانے پینے کی دیگر اشیاء میں ہوشربا اضافے اور مہنگائی کی تاریخی بلند ترین سطح پر عوام پھٹ پڑے، کنٹینر پر کھڑے ہو کر عمران خان کہتے تھے کہ ڈالر مہنگا ہو، پیٹرول مہنگا ہو تو سمجھ لو وزیر اعظم چور ہے، مہنگائی خان کی حکومت کو اللہ ہی غرق کرے گا، مہنگائی خان اور اس کی نالائق معاشی ٹیم نے عام آدمی سے دو وقت کی روٹی بھی چھین لی ہے، تعمیراتی سامان کی قیمتیں بھڑنے سے کام بند چکے ہیں اور روزانہ کی اجرت پر کام کرنے والے بیروزگار ہو گئے ہیں تفصیلات کے مطابق موجودہ حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات میں اتنے زیادہ اضافے سے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں، بجلی کا جو بم حکومت کی جانب سے گرایا گیا ہے اس سے غریبوں کی اموات ہونگی گیس کی قیمتوں میں بھی بہت زیادہ بڑھا دی گئی ہیں ایک دن میں گھی اور پکانے کے تیل میں 110 روپے کلو تک اضافہ کیا گیا ہے اسی طرح مرغی کے گوشت، انڈوں، آٹا، دالیں، چاول، مصالحہ جات، سبزیوں، پھلوں اور دیگر کی قیمتیں تاریخ کی بلند سطح پر پہنچ چکی ہیں حالیہ مہنگائی کی وجہ سے غریب بہت زیادہ متاثر ہوں گے تعمیراتی سامان کی قیمتیں بھڑنے سے ہونے والے تعمیراتی کا بند کر دیئے گئے ہیں جس کی وجہ سے روزانہ اجرت پر کام کرنے والے بیروزگار ہو چکے ہیں اور ان کی مالی مشکلات بڑھ گئی ہیں اس طرح بجلی مہنگی ہونے سے چھوٹی صنعتیں بھی بند ہو گئی ہیں اور ان میں کام کرنے والے مزدور بھی بے روزگار ہو گئے ہیں اس حوالے سے لوگوں کا کہنا ہے کہ مہنگائی خان نے حکومت میں آنے سے قبل جو وعدے کئے تھے وہ یو ٹرن خان میں تبدیل ہو چکے مہنگائی خان کنٹینر پر کھڑا ہو کر کہتا تھا کہ اگر ڈالر مہنگا ہو تو سمجھ لو وزیر اعظم چور ہے، پیٹرول، بجلی اور گیس مہنگا ہو تو وزیر اعظم چور ہے اب عمران خان نے سب کچھ مہنگا کر دیا ڈالر تاریخ، پیٹرول، گیس اور کھانے پینے کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں تو اب واقع ہی وزیر اعظم چور ہے عمران خان کی نا صرف اپنی نااہلی اور نا تجربہ کاری ظاہر ہو چکی ہے بلکہ ان کی معاشی ٹیم کی نااہلی بھی عوام کے سامنے آ چکی ہے نالائق حکمرانوں نے عام آدمی سے دو وقت کی روٹی کا حصول ناممکن بنا دیا ہے اور اس ملک کے غریب عوام کی بد دعاوئں سے موجودہ حکمرانوں کا اللہ بیڑا غرق کرے گا جنہوں نے غریبوں کے بچوں کو بھوکا سونے پر مجبور کیا ہے انھوں نے حکمرانوں سے مطالبہ کیا کہ وہ اللہ کے عذاب کو دعوت نہ دیں حالیہ اور اس سے قبل پیٹرولیم مصنوعات، بجلی، گیس اور کھانے پینے کی قیمتوں میں اضافے کو واپس لیں تاکہ عام آدمی کو دو وقت کی روٹی میسر آ سکے٭٭