فریال تالپور نیب کے ہاتھوں گرفتار … گھر پر نظر بند رہیں گی

قومی احتساب بیورو نیب نے سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما اور سندھ اسمبلی کی رکن فریال تالپور کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں باقاعدہ گرفتار کرلیا ہے اور وہ اپنے گھر پر ہی نظر بند رہیں گی نیب نے انہیں گرفتاری کے بعد اپنے دفتر منتقل نہیں کیا بلکہ اسلام آباد میں واقع زرداری ہاؤس میں قید قید رکھا گیا ہے ۔ان کے گھر کو سب جیل قرار دے دیا گیا ہے اور اس سلسلے میں ایک نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے ۔نیب کی ٹیم نے ڈاکٹروں کی ایک ٹیم کو رہائش گاہ پر کلک کر کے فریال تالپور کا طبی معائنہ بھی کرالیا ہے۔



نیب کے اعلامیہ کے مطابق فریال تالپور تاحکم ثانی اپنے گھر میں قید رہیں گی ان کی عزت نفس کا پہلے بھی احترام رکھا گیا اور آئندہ بھی مکمل خیال رکھا جائے گا۔ یاد رہے کہ فریال تالپور نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں عبوری ضمانت حاصل کی جس میں پانچ مرتبہ توسیع بھی کی گئی اسلام آباد ہائی کورٹ نے اس کیس میں فرد تالپور آصف زرداری کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد کر دی تھی جس کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری کو گرفتار کرکے محفوظ منتقل کیا گیا تھا۔