عید کا چاند دیکھنے کے معاملے پر پی ٹی آئی کی حکومت تقسیم ہو گئی ہے

شوال کا چاند دیکھنے اور عید منانے کے معاملے پر پاکستان تحریک انصاف کی حکومت دو حصوں میں تقسیم ہو گئی ہے پی ٹی آئی نے کے پی کے میں عید منانے کا اعلان کردیا ہے اور مفتی پوپلزئی کے ساتھ کھڑی ہوگئی ہے صوبائی وزیر شوکت یوسف زئی نے اعلان کیا ہے کہ پی ٹی آئی صوبے میں دو عیدیں منانے کے خلاف ہے لہذا پوپلزئی کے فیصلے کے مطابق منگل کو عید منائے گی دوسری طرف پی ٹی آئی کی مرکزی حکومت اس فیصلے کے ساتھ نہیں۔



پی ٹی آئی کی حکومت میں ایک اور بات واضح ہوگئی ہے کہ پی ٹی آئی کے پی کے کے رہنماؤں کی اکثریت مفتی منیب الرحمن کے خلاف ہے پوپلزئی کا مرکزی رویت ہلال کمیٹی میں کوئی کردار نہیں ہے اس کے باوجود پی ٹی آئی کے پی کے میں پزیرائی کے ساتھ کھڑی ہو گئی ہے۔ پی ٹی آئی جب تک اپوزیشن میں تھی تو حکومت پر تنقید کیا کرتی تھی کہ حکمران اس ملک میں ایک عید پر بھی لوگوں کو متفق نہیں کر سکتے لیکن اب جبکہ پی ٹی آئی کی وفاق اور صوبوں میں اپنی حکومت ہے تو اسے بھی ایسی ہی مشکل صورتحال کا سامنا ہے جیسی ماضی کی حکومتوں کو رہی ۔آج بھی ملک میں دو عیدیں منائی جارہی ہیں اور دلچسپ بات یہ ہے کہ پی ٹی آئی کی مرکزی حکومت اور دو صوبوں میں حکومتیں الگ الگ دن عید منا رہی ہیں۔