تھر کول پاور پراجیکٹ ملک کی توانائی کی تمام تر ضروریات پوری کرنے کی صلاحیت رکھتا ھے۔ امتیاز احمد شیخ

تھر میں بجلی کے نئے منصوبوں کو پانی فراہمی کے لئےڈیزائن اور فزیبلیٹی رپورٹ تیاری کے لئے نیسپاک کو ہدایات دے دی ہیں، وزیر توانائی سندھ
تھر میں کوئلے سے بجلی بنانے کے نئے منصوبوں کو پانی کی فراہمی کے لئے وزیر توانائی امتیاز احمد شیخ کی زیر صدارت ان کے دفتر میں اجلاس منعقد ھوا اجلاس میں تھر کول پاور پراجیکٹ کے تمام اسٹیک ہولڈرز کے نمائندوں نے شرکت کی جن میں وزیر اعلیٰ سندھ کے اسپیشل اسسٹنٹ اشفاق میمن،چیئر پرسن پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ بورڈ سندھ محترمہ ناہید شاہ درانی،سیکریٹری توانائی سندھ مصدق احمد خان،سیکریٹری آبپاشی سندھ ڈاکٹر سعید احمد منگنیجو، سیکریٹری فنانس سندھ نجم شاہ ،اسپیشل سیکریٹری فنانس آصف جہانگیر،



مینیجنگ ڈائریکٹر نیسپاک ڈاکٹر طاہر مسعود،چیف ایگزیکیٹو افیسر تھر انرجی لمیٹڈ احسن ظفر، سی ای او حبکو خالد منصور،سی ای او سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی ابو الفضل رضوی،سی ای او صدیق سنز عبدالوکیل،پراجیکٹ ڈائریکٹر حاجی خان جمالی،ایڈیشنل سیکریٹری توانائی سندھ اسحق کھوڑو،ڈپٹی سیکریٹری منیر شیخ اور دیگر افسران شامل تھے۔ اجلاس میں تھر کول پاور پراجیکٹس کو لیفٹ بنک آؤٹ فال ڈرین سے پانی کی فراہمی کے لئے فزیبلیٹی اور ڈیزائن کی تیاری کے لئے نیسپاک کو ہدایات دی گئیں ہیں



کہ جلد از جلد پانی فراہمی کے منصوبے کی فزیبلیٹی اور ڈیزائن تیار کرکے منظوری کے لئے پیش کئے جائیں۔اجلاس میں وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ نے کہا کہ تھر کول منصوبہ سندھ کا اھم ترین پراجیکٹ ھےجو ملک کی توانائی کی تمام تر ضروریات پوری کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔اس منصوبے کو پانی کی فراہمی کے لئے تیز تر اقدامات کئے جانے کی اشد ضرورت ہے تاکہ بجلی بنانے کے نئے منصوبے بروقت فعال ہوسکیں۔