ویسٹ انڈیز سے ہارنے کے باوجود پاکستان ایک خطرناک ٹیم ہے ۔ برطانوی کوچ گراہم تھارپ

انگلینڈ کے بیٹنگ کوچ نے کہا ہے کہ پاکستان ویسٹ انڈیز کے خلاف پہلا میچ ہار گئی ہے لیکن پاکستان بہرحال خطرناک ٹیم ہے ہم ٹرینٹ برج کے اسی گراؤنڈ پر پاکستان کے خلاف میدان میں اتریں گے جہاں گزشتہ سال ہماری ٹیم نے آسٹریلیا کے خلاف 481 رنز کا پہاڑ جیسا اسکور کرکے نیا ریکارڈ قائم کیا تھا ۔اگر برطانیہ کی بیٹنگ پہلے آئی تو ہم زیادہ سے زیادہ رنز بنانے کی پوری کوشش کریں گے اور اگر ایسا نہ کر سکے تو کم از کم اتنا مناسب اسکور ضرور بورڈ پر ہونا چاہیے جس کا دفاع آسانی سے کیا جا سکے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو انگلینڈ نے چار  ون ڈے سیریز میں شکست ضرور دی ہے۔



 اب انہیں  تیاری اور نئی حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اترنا ہوگا پیر کو جب پاکستان اور برطانیہ کی ٹیمیں آمنے سامنے آئیں گی برطانوی ٹیم نئی حکمت عملی کے تحت میدان میں اترے گی یقینی طور پر پاکستان ویسٹ انڈیز کے خلاف ایک سو پانچ رنز پر آؤٹ ہونے کے بعد اس بات کی کوشش کرے گا کہ وہ برطانیہ کے خلاف زیادہ رنز بنائے ہم جانتے ہیں کہ برطانیہ کے ہاتھوں چاروں ون ڈے ہارنے کے باوجود پاکستان نے برطانیہ کے خلاف کافی بڑے بڑے رنز بنائے تھے۔



اس لئے پاکستانی ٹیم کو آسان نہیں لیا جا سکتا ہے پاکستانی ٹیم ویسٹ انڈیز کے خلاف شارٹ پچ کی گیندوں کا مقابلہ نہیں کر سکے اس لیے اب پاکستان کے خلاف ویسٹ انڈیز کی طرح انگلینڈ کی ٹیم بھی سوچ رہی ہے کہ جو فر ا آ ر چر کے ساتھ ساتھ ایک اور فا سٹ بو لر مارک ووڈ کو بھی شامل کیا جائے ۔لیکن اس کا  فیصلہ میچ سے کچھ دیر پہلے ہوگا ۔