سندھ میں جاری وفاقی حکومت کے منصوبے اس سال مکمل ہوجائیں گے، گورنرسندھ کی پریس کانفرنس

کراچی- گورنرسندھ عمران اسماعیل نے گورنر ہاﺅس میں منعقدہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں جاری وفاقی حکومت کے منصوبے اس سال مکمل ہوجائیں گے، کراچی میں گرین لائن منصوبے کے لئے 500 نئی بسیں چلائی جائیں گی جبکہ سکھر حیدرآباد موٹروے پر 250 ارب روپے لاگت آئے گی، منصوبوں کی تکمیل کے بعد ان منصوبوں کا افتتاح وزیراعظم پاکستان عمران خان خود کریں گے۔



گورنر سندھ نے کہا کہ پی ایس ڈی پی 8 سو ارب روپے سے کم ہو کر 675 ارب روپے پر آیا ہے، رقم کم ہونے سے کوئی ایک صوبہ نہیں ، چاروں صوبے متاثر ہوئے ہیں جبکہ پی ایس ڈی پی میں کمی کی بناءپر صوبہ سندھ کے صرف 10 فی صد منصوبے متاثر ہوئے ہیں۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ سکھر آئی بی اے کی اپ گریڈیشن کو روکنے کی اطلاعات درست نہیں ہےں، سندھ کو آئل اینڈگیس کی رائلٹی کی مد میں 332 ارب روپے وفاق کی جانب سے دئے جاتے ہیں، لاڑکانہ میں ایچ آئی وی کی صورتحال سے نمٹنے کے لئے وفاق بھرپور مدد و تعاون فراہم کر رہا ہے۔



گورنر سندھ نے کہا کہ ہر مشکل وقت میں وفاقی حکومت سندھ کی عوام کے ساتھ کھڑی ہے۔ میڈیا کے نمائندگان کا سوال کا جواب دیتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ کے فور منصوبے میں وفاق نے موجودہ پی سی ون کے مطابق اپنے حصہ کی ادائیگی کرچکا ہے۔ نیشنل میوزیم کے بارے میں کئے گئے سوال پر گورنر سندھ نے کہا کہ ماہرین کی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے تاکہ نیشنل میوزیم میں موجود تاریخی و نایاب مجسموںاور دیگر نایاب اشیاءکی دیکھ بھال بہتر انداز سے کی جاسکے۔