ڈی جی PCSIR کی گورنر سندھ سے گورنر ہاﺅس میں ملاقات

کراچی- گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت عوام کو صاف پانی، صحت ، تعلیم سمیت زندگی کی بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کا ر لارہی ہے اس ضمن میں پاکستان کونسل آف سائنٹیفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ کا کردار بھی بہت اہمیت کا حامل ہے ۔  ان خیالات کا انہوں نے پاکستان کونسل آف سائنٹیفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ (PCSIR) کے ڈائریکٹر جنرل محمد علیم احمد سے گورنر ہاﺅس میں ملاقات کے دوران کیا۔


اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے محمد علیم احمد نے گورنر سندھ کو بتایا PCSIR لیبارٹری کمپلیکس کراچی کے زیر انتظام سات ریسرچ سینٹرز ہیں، جس میں ایپلائڈ کیمسٹری ریسرچ سینٹر، سینٹر فارانوائرومینٹل اسٹڈیز، ایپلائڈ فزکس، کمپیوٹر اینڈ انسٹرومینٹیشن سینٹر، سینٹر فار ڈویلپمنٹ آف لیبارٹری ایکوپمنٹ، انجینئرنگ سروس سینٹر، فوڈ اینڈ میرین ریسورسز ریسرچ سینٹر اور فارما سیوٹیکل ریسرچ سینٹر شامل ہیں۔ ان سینٹرز میں عالمی معیار کے مطابق جدید تقاضوں پر ریسرچ اور ڈیویلپمنٹ کا کام کیا جارہا ہے ادارے کے تحت تھر کے 22ہزار کلومیٹر کے رقبہ پر پانی کی کوالٹی کو جانچنے کے لئے میپنگ کی گئی ہے جب کہ پاکستان سائنس فاﺅنڈیشن کے پروجیکٹ کے تحت چھاچھرو کے علاقے میں ٹرٹمنٹ پلان نصب کیا گیا ہے جس کے ذریعے 1500 گیلن پانی فی گھنٹہ حاصل کیا جا رہا ہے، جو کہ 4 ہزار سے زائد لوگوں کو مستفید کر رہا ہے، محمد علیم احمد نے گورنر ہاﺅس میں الٹرا فلٹریشن پلانٹ نصب کرنے میں بھی دلچسپی کا اظہار کیا ، اس موقع پر ڈی جی PCSIR محمد علیم احمد نے ادارے کی جانب سے گورنر سندھ عمران اسماعیل کو یادگاری شیلڈ بھی پیش کی۔