پی ایم ڈی سی نے خود کو فائدہ دلانے کے لئے ہائی کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کرتے ہوئے میڈیا پر ایک منظم مہم چلائی، وزیر توانائی سندھ

وزیر توانائی سندھ امتیاز احمد شیخ نے کہا ہے کہ لاکھڑا کول مائیننگ میں کسی مزدور کو بے روزگار نہیں کیا گیا، گذشتہ روز نجی ٹی وی پر چلنے والی خبر بے بنیاد ہے ، انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ لاکھڑا کول مائیننگ جو کہ ضلع جامشورو میں واقع ہے اس کو پاکستان منرل ڈولپمینٹ (پی ایم ڈی سی) کو 30 سالہ لیز پر دیا گیا تھا جس کی معیاد اپریل 2015 میں ختم ہو چکی تھی،انہوں نے کہا کہ پی ایم ڈی سی لاکھڑا کول میں لیز ختم ہونے کے بعد غیرقانونی طور پر مائیننگ کر رہا تھا ،جبکہ سندھ ہائی کورٹ نے 2018-12-20 کو پی ایم ڈی سی کو کول مائیننگ کا کام روکنےکا حکم دیا تھا،


مگر کمپنی نے ہائی کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کھدائی کا کام جاری رکھاجس کی وجہ سے گذشتہ چند روز قبل ایک ناگہانی حادثہ پیش آیا جس میں 5 معصوم جانیں ضائع ہوگئی انہوں نے کہا کہ سندھ ہائی کورٹ کے حکم کے تحت حکومت سندھ مجوزہ زمین کی جلد از جلد قانونی طریقے سے بڈنگ کرے گی،انہوں نے کہا کہ پی ایم ڈی سی نے خود کو فائدہ دلانے کے لئے ہائی کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کرتے ہوئے میڈیا پر ایک منظم مہم چلائی جس میں میڈیا کو غلط بیانی کرتے ہوئے گمراہ کیا گیا وزیر توانائی سندھ نے مذید کہا کہ کسی بھی مزدور کو بے روزگار کرنا پیپلز پارٹی کا منشور نہیں ہے،لاکھڑا کول میں جان بحق ہونے والے مزدوروں کے ورثا کے لئے میں نے وزیر اعلیٰ سندھ سے 25 لاکھ روپے فی خاندان مدد کرنے کی سفارش کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں