36

دس سالہ عدالتی جنگ کے بعد اٹھارویں ترمیم کے ذریعے صوبے کے تین بڑے سرکاری اسپتال وفاق کے حوالے کردیئے گئے

وفاقی وزارت صحت کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن کے مطابق عدالتی اور وفاقی کابینہ کے فیصلوں کے بعد وفاقی حکومت نے سندھ کے تین بڑے اسپتالوں قومی ادارہ برائے امراض اطفال، جناح اسپتال اور قومی ادارہ برائے امراض قلب کا انتظامی اور مالی کنٹرول سنبھال لیا ہے۔ وفاقی وزارت صحت کے اعلیٰ حکام نے بتایا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں وفاقی حکومت کو 90 روز کے اندر کراچی کے تینوں اسپتالوں کا انتظام سنبھالنا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ نوے روز اسی ہفتے پورے ہوگئے تھے۔


جس کے بعد محکمہ قانون کی جانب سے کہا گیا کہ وفاق کو تینوں اسپتالوں کا کنٹرول سنبھالنے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردینا چاہیے۔
واضح رہے کہ وفاقی کابینہ نے دو اپریل کو سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں تینوں اسپتالوں کو وفاق کے ماتحت کرنے کی منظوری دی تھی۔ ان سرکاری اسپتالوں کو صوبے سے واپس وفاق میں جانے کے لئے دس سال عدالتی جنگ بھی جاری رہی،تاہم فیصلہ وفاق کے حق میں آیا۔ وزارت صحت کی جانب سے جناح اسپتال کی سربراہ سیمی رخصت پر چلی گئیں ہیں جبکہ فیصلے کے بعد ملازمین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی کیونکہ عرصہ دراز سے تعطل کا شکار ترقیوں اور تبادلوں کا سلسلہ اب بحال ہونے کا امکان ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں