سابق صدر آصف علی زرداری نے نیب کو نیا چیلنج دے دیا

سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ نیب پر کوئی غصہ نہیں ابھی کچھ ثابت نہیں ہوا آپ بوڑھوں کو ہتھکڑیاں لگاؤ اور جیلوں میں ڈالو پھر کہو معیشت بھی چلاؤ یہ سب کیسے ممکن ہے۔ صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ نیب چیئرمین کاعہدہ جاوید اقبال کو انٹرویو دینے کی اجازت نہیں دیتا اگر انہوں نے انٹرویو دیا ہے تو قانونی کاروائی کریں گے۔


ایک سوال پر انہوں نے کہا نو مہینے تک اپوزیشن کے اتحاد کا سوچا ہی نہیں تھا اب سوچا ہے تو اتحاد بھی ہوگیا ہے میں تو شروع سے کہہ رہا ہوں کہ یہ سلیکٹر وزیراعظم ہے ۔آصف علی زرداری نے نیب کو نیا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ ہم نیب کا بائیکاٹ نہیں کریں گے بلکہ اسے تھگا ئیں گے۔ ایک سوال پر آصف زرداری کا کہنا تھا ہم قومی حکومت کی بجائے نئے الیکشن کی طرف جائیں گے اپوزیشن کی قیادت اب نئی جنریشن کرے گی مولانا صاحب کا بیٹا ۔میرا بیٹا اور مریم بیبی لیڈ کریں گی اور ہم آرام کریں گے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ ملنے کا ارادہ ہوگا تو ملاقات کرلیں گے اس میں کوئی مسئلہ نہیں ان کی طبیعت ٹھیک نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں