پاکستان کرکٹ ٹیم کا پندرہ رکنی ورلڈ کپ اسکواڈ ۔ کون کیسے اندر اور کیسے باہر ہوا؟

ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کے لیے پاکستان کے پندرہ رکنی سکواڈ کو حتمی شکل دے کر اعلان کردیا گیا ہے جس کے مطابق وہاب ریاض اور محمد عامر ٹیم میں شامل ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ بیٹسمین ابدالی کو باہر کر دیا گیا ہے اسپینر شاداب بھی ٹیم میں شامل ہونے میں کامیاب ہوئے ہیں پندرہ رکنی اسکواڈ کو چیف سلیکٹر انضمام الحق نے حتمی شکل دی ہے انگلینڈ کے خلاف پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز میں چار صفر سے بری طرح شکست کھانے والی پاکستانی ٹیم میں اہم تبدیلیاں کی گئی ہیں عال ونڈر فہیم اشرف کو ٹیم سے باہر کردیا گیا ہے جبکہ جنید خان بھی جگہ نہیں بنا سکے۔


انضمام الحق کا کہنا ہے کہ وہاب ریاض کو ان کے تجربے کی وجہ سے ٹیم میں شامل کیا گیا ہے وہ سینئر اور تجربہ کار بولر ہیں اور انگلینڈ میں بولنگ کرنے کا کافی تجربہ رکھتے ہیں جبکہ شاداب خان ٹیم کی ضرورت ہیں اور توقع ہے کہ وہ صحت مند رہیں گے فہیم اشرف کی جگہ محمد عامر اور آصف علی کو شامل کیا گیا ہے جنید خان کو باہر بٹھایا گیا ہے محمد حفیظ اور شعیب ملک کو تجربہ کار بیٹسمین کے طور پر شامل رکھا گیا ہے اور انضمام الحق نے توقع ظاہر کی ہے جو اپنے تجربے سے ٹیم کی بہترین کارکردگی دکھانے میں کردار ادا کریں گے یاسر شاہ کو گھر بھیج دیں بھیج دیا گیا ہے ون ڈے کرکٹ میں لیگ اسپنر یاسر شاہ کی کارکردگی شروع سے ہی سوالیہ نشان بنی رہی ہے ان کی جگہ شاداب خان شامل کیے گئے ہیں۔


پندرہ رکنی سکواڈ میں یہ کھلاڑی شامل ہیں کپتان سرفراز احمد ۔فخرزمان امام الحق آصف علی بابر اعظم حارث سہیل شعیب ملک محمد حفیظ شاداب خان وہاب ریاض عماد وسیم محمد عامر حسن علی شاہین شاہ آفریدی محمد حسنین۔امام الحق کی شمولیت پر شروع سے سوال اٹھائے جارہے ہیں کہ کیا وہ پرچی ہیں اور انہیں دوام الحق کی وجہ سے شامل رکھا جاتا ہے ان کے اور ابدالی کے درمیان مقابلہ تھا اور عابد علی ٹیم سے باہر ہو گئے کیونکہ ان کے پاس کوئی پرچی نہیں تھی ۔حارث سہیل کی شمولیت پر بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں فواد عالم اور رومان ریز کو نظر انداز کرنا ہے اور ابدالی کو بغیر چانس دیا ٹیم سے باہر کرنے پر سب سے زیادہ اعتراضات ہو رہے ہیں ۔سرفراز احمد کی موجودگی کے باوجود دوسرے وکٹ کیپر ٹیم میں نہیں ہے کامران اکمل اور عمر اکمل کو مسلسل نظرانداز کرنے پر بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں