نواز شریف کی جان کو خطرہ ہو سکتا ہے ۔ اسلام آباد ہائیکورٹ میں نئی درخواست دائر

سابق وزیراعظم نواز شریف کی جان کو خطرہ لاحق ہو سکتا ہے جیل میں ان کا علاج نہیں ہو سکتا جس کی انہیں ضرورت ہے نواز شریف کے وکلا کی جانب سے طبی بنیادوں پر ضمانت کے لئے نئی درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر کر دی گئی درخواست میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے طبی بنیاد پر ضمانت کے لیے سزا کی گئی ہے اور چیئرمین نیب سپریٹنڈنٹ جیل کوٹ لکھپت احتساب عدالت کو فریق بنایا گیا ہے ذرائع کے مطابق درخواست کے ساتھ برطانیہ اور امریکہ کے سپیشلسٹ ڈاکٹرز کی رائے کو بھی شامل کیا گیا ہے.


درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ شدید تناؤ کی کیفیت سے نواز شریف کی جان کو خطرہ ہو سکتا ہے میڈیکل رپورٹس کے مطابق نوازشریف کو گردوں اور عارضہ قلب کی بیماری ہے اور ان کا علاج نواز جیل میں ممکن نہیں نواز شریف کا علاج بیرون ملک ان ڈاکٹروں سے کروایا جائے جنہوں نے پہلے ان کا علاج کیا تھا ۔
مسلم لیگی رہنماوں کے مطابق وکلا کے مشورے سے اب اس بات کا قوی امکان ہے کہ عدالت اس معاملے کو زیر غور لائے گی اور اگر عدالت سے ضمانت ملتی ہے تو پھر نواز شریف بہتر علاج کیلئے بیرون ملک جاسکیں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں