بلاول بھٹو زرداری کی دعوت افطار میں مریم نواز کی شرکت

وزیراعظم عمران خان کی منتخب حکومت کے خلاف اپوزیشن کی بڑی جماعتیں ہیں صف آراء ہو رہی ہیں عیدالفطر کے بعد حکومت مخالف تحریک چلانے کا اعلان ہوچکا ہے اور اب بلاول بھٹو زرداری کی دعوت افطار میں مریم نواز نے شرکت کرنے کی یقین دہانی کر دی ہے بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے سیاسی رہنماؤں کے اعزاز میں اسلام آباد میں اتوار کو ایک اور تکلف افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا ہے جس میں مسلم لیگ نون کے وفد میں مریم نواز اور حمزہ شہباز بھی شریک ہوں گے ۔


سیاسی مبصرین کے مطابق حمزہ شہباز اور بلاول کا ایک ساتھ باہر آنا سیاسی مخالفین کے لیے بڑا پیغام ہوگا باالخصوص ایسے ماحول میں جب کہ سابق صدر آصف علی زرداری اعلان کر چکے ہیں کہ عید کے بعد احتجاج ہوگا اور تحریک چلائیں گے جبکہ سابق وزیراعظم نواز شریف بھی جیل میں اپنی پارٹی کے رہنماؤں سے ملاقات کے دوران انہیں عید کے بعد حکومت مخالف تحریک چلانے کی اجازت دے چکے ہیں ۔اس پس منظر میں بلاول بھٹو زرداری مریم نواز اور حمزہ شہباز کا ایک ساتھ سیاسی محاذ پر اکٹھے ہونا مستقبل میں حکومت کے لیے نئے مسائل کا اشارہ دے رہا ہے ۔سیاسی مبصرین کے مطابق یہی وجہ ہے کہ حکومتی صفوں میں کھلبلی مچی ہوئی ہے اور ملکی سطح پر اپوزیشن کو اکٹھے ہوتا دیکھ کر حکومت کے لیے فکر اور تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے جس کا اظہار وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کے اس بیان سے بھی ہوتا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ افطار پارٹیوں کی آڑ میں منتخب حکومت کے خلاف سازش ہو رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں