افطار پارٹیوں کی آڑ میں منتخب حکومت کے خلاف سازش کون کر رہا ہے؟

سیاسی حلقوں میں اس حوالے سے تبصرے اور بحث شروع ہو گئی ہے کہ آخر افطار پارٹیوں کی آڑ میں منتخب حکومت کے خلاف سازش کون کر رہا ہے ؟وہ کون ہے جو عمران خان کی حکومت کو گرانا چاہتا ہے اور کون ہے جو اس کے خلاف سب کو اکٹھا کر رہا ہے ؟ واضح رہے کہ وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ افطار پارٹی کے نام پر منتخب حکومت کے خلاف سازش افسوسناک ہے اپوزیشن کو اپنی نیت کی مار پڑ رہی ہے یہ صرف اپنی دولت اور اولاد کے مستقبل کے بارے میں فکر مند ہیں۔


ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے یہ باتیں سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر اپنے پیغام میں کی ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ رمضان کا ماہ مقدس حقوق اللہ اور حقوق العباد کا حسین امتزاج ہوتا ہے لیکن بدقسمتی سے اس بابرکت مہینے میں عوام کو مسائل کا روزہ رکھوانے والے افطاریوں کی آڑ میں ذاتی سیاسی اور کاروباری مفادات کے تحفظ میں مصروف عمل ہیں ۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ افطار کے نام پر منتخب جمہوری حکومت کے خلاف سازش کرنا افسوسناک ہے۔ دوسری طرف اپوزیشن نے ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافے پر حکومت کو کلین شیو تنقید کا نشانہ بنا رکھا ہے اور اس صورتحال کو حکومت کی نا اہلی اور ناقص پالیسیوں کا نتیجہ قرار دیا جارہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں