ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کرنے کا اعلان

ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈاکٹر امیر احمد شیخ کی زیرِ صدارت ایک اعلیٰ سطعی اجلاس کراچی پولیس آفس میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں رمضان کے دوسرے عشرے کی مناسبت سے سیکورٹی, موٹرسائیکل کی چوری کی روک تھام اور دیگر امور سے متعلق تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ کراچی پولیس چیف ڈاکٹر امیر احمد شیخ نے پولیس کو ہدایات دی کہ قانون نافذ کرنیوالے اور انٹیلی جینس ایجنسیوں سے تمام تر روابط کو ہر سطح پر مزید مضبوط کیا جائے، تاکہ امن و امان کے حالات پر کنٹرول اور جرائم کے خلاف مجموعی اقدامات کو مؤثر بنایا جا سکے۔ اجلاس میں شہر کراچی میں امن و امان کی مجموعی صورتحال اور اس حوالے سے زونل اور ضلعی پولیس اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور مزید ضروری احکامات دیئے گئے۔


 اجلاس میں سی پی ایل سی چیف کے علاوہ تمام زونل ڈی آئی جیز کراچی ، ڈی آئی جی سی آئی اے کراچی، ڈی آئی جی ٹریفک، تمام ضلعی ایس ایس پیز، ایس ایس پیز انویسٹی گیشن ون اور ٹو ایسٹ نے شرکت کی۔
اجلاس میں افسران نے موٹر سائیکل چوری کی روک تھام اور اس کی ریکوری سے متعلق تجاویز پیش کیں۔ اس موقع پر کراچی پولیس چیف نے ہدایت دی کہ برآمد کی گئی موٹر سائیکلیں متعلقہ تھانے کا سربراہ چوبیس گھنٹے کے اندر اے سی ایل سی کو آگاہ کرنے کا پابند ہوگا۔ اجلاس میں شہر قائد میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی اور موٹر سائیکل سواروں کا ہیلمٹ نہ استعمال کرنے والوں کے خلاف عنقریب خصوصی مہم شروع کرنے کا اعلان ۔


اس موقع پر ڈی آئی جی ٹریفک کا کہنا ہے کہ ہماری ترجیح ہے کہ مہم میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر کنٹرول کررہے ہیں ، خلاف ورزی اور ہیلمٹ نہ پہننے کے خلاف چالان کا مقصد شہریوں کی جانوں کو محفوظ بنانا ہے۔ اجلاس میں پولیس افسران نے ڈسٹرکٹ میں موجود تھانون میں جاری تزئین و آرائیش اور مرمتی کاموں کی پیش رفت سے آگاہ کیا۔ کراچی پولیس چیف نے کیے جانے والے کام پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا اور افسران کی کارگردگی کو سراہا اور ہدایت دی کہ جاری کام کے معیار پرکسی قسم کا کوئی سمجھوتہ نہ کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں