پیرس بنانے کے دعویدار بلاول بھٹو زرداری اور ان کی حکومت لاڑکانہ میں معصوم بچوں اور عوام کے مرنے پر کیوں خاموش ہے، سردار عبدالرحیم

پاکستان مسلم لیگ فنکشنل سندھ کے جنرل سیکریٹری اور جی ڈی اے کے انفارمیشن سیکریٹری سردار عبدالرحیم نے سندھ میں ایڈز کی بیماری میں اضافے اور ہیپاٹائٹس کنٹرول پروگرام کے خاتمے پر سخت تشویش اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کے صحت کے لیے ہر عام بجٹ میں اربوں روپے مختص ہونے کے باوجود آج سندھ کا عوام ایڈز، ہیپاٹائٹس اور دیگر موذی امراض سے تڑپ تڑپ کر مررہے ہیں ،لیکن حکمران کرپشن میں مصروف عمل ہیں لاڑکانہ کو سندھ کا پیرس بنانے کے دعویدار بلاول بھٹو زرداری اور ان کی حکومت لاڑکانہ میں معصوم بچوں اور عوام کے مرنے پر کیوں خاموش ہے۔


ایڈز پر کنٹرول کرنے میں حکومت ناکام ہوچکی ہے ۔انہون نے مزید کہا کے ہیپاٹاٰئٹس کنٹرول پروگرام عملی طور پر بند کردیا گیا ہے کراچی کے جناع اسپتال، سول اسپتال سمیت سندھ کے تمام ضلعی اسپتالوں میں ہیپاٹائٹس کی دوائیاں نہیں مل رہی ہیں عوام موت کو ساتھ لیکر گھوم رہی ہے نااہل حکومت سندھ ترقی کی بات کس منہ سے کررہی ہے،سندھ کے حکمران عوام کے غضب سے نہیں بچ سکتے ۔انھوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے سندھ میں صحت کی خطرناک صورتحال  کا ازخود نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے نیب کے چیئرمین سے مطالبہ کیا ہے کے محکمہ ہیلتھ میں اربوں کی کرپش میں ملوث لوگوں کے خلاف کارروائی کرکے اربوں روپے واپس لائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں