78

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان ہیں یا آئی ایم ایف کی خاتون سربراہ؟

پاکستان میں تحریک انصاف کی اپوزیشن نے سوال اٹھایا ہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان ہیں یا آئی ایم ایف کی خاتون سربراہ کرسٹین لیگارڈ ؟ ایم میں فون ہوتی ہے پاکستان کی پالیسی بنانے والی ؟ تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما نہال ہاشمی ایڈوکیٹ نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور سوال اٹھایا کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان ہیں یا آئی ایم ایف کی خاتون سربراہ۔ جو حکومت کو پالیسی بنا کر دیتی ہیں ۔آئی ایم ایف کون ہوتا ہے پاکستان کی پالیسی بنانے والا ؟ نہال ہاشمی جو ماضی میں بھی متنازعہ خبروں کی زد میں رہے اور اپنی حکومت میں بھی زیرِ عتاب آئے تھے


 انہوں نے وزیراعظم عمران خان پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان وزیراعظم نہیں ہے آئی ایم ایف کی خاتون سربراہ پاکستان کی وزیراعظم بن چکی ہیں وہیں پالیسی بنا کر دیتی ہیں۔
نواز شریف دور حکومت کے حوالے سے نہال ہاشمی نے کہا کہ عوام نے نوازشریف کو ووٹ دیا سابق وزیراعظم نے وہی فیصلہ کیا جس سے عوام کو فائدہ ہوا اور پاکستان کو سی پیک سے کھڑا کیا اور آئی ایم ایف سے جان چھڑا لی تھی۔ دوسری طرف پاکستان کے مشہور صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود نے بھی عمران خان کی حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ اگر بربادی سے بچنا ہے تو آئی ایم ایف کے نمائندے باقر رضا سے دور رہے اسد عمر کو بھی یہی مشورہ دیا گیا تھا کہ ڈاکٹر باقر سے دور رہیں ۔


یاد رہے کہ عمران خان حکومت نے ڈاکٹر باقر کو آئی ایم ایف کی نوکری چھوڑ کر پاکستان آنے پر گورنر اسٹیٹ بینک بنا دیا ہے نئے گورنر سٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر کے بارے میں اطلاعات آ رہی ہیں کہ ان کے لیے شناختی کارڈ بھی ہنگامی بنیاد پر تیار کیا گیا ہے اور ان کا تعلق ملتان کے قریبی علاقے وہاڑی کے گاؤں سے ہے وہ اردو انگلش اور پنجابی زبانوں پر مہارت رکھتے ہیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کان کے سب سے بڑے وکیل بن کر سامنے آئے ہیں اور انہوں نے کہا ہے کہ ڈاکٹر رضا کرکٹ پاکستان کا بیٹا ہے اور وہ زیادہ تنخواہ چھوڑ کر پاکستان کی خدمت کرنے پاکستان آیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں