محکمہ اطلاعات کے مختلف محکموں میں تعینات افسران تعلقات عامہ کے ایک اہم اجلاس کی صدارت

کرا چی 09جون۔سیکریٹری اطلاعات سندھ اعجاز حسین بلوچ نے کہا ہے کہ مختلف وزرا ، مشیروں اور محکموں کے ساتھ تعینات افسران تعلقات عامہ پر عوامی فلاح وبہبود کے منصوبوں کی تشہیر کی ذمہ داری عائد ہوتی ہے اس لئے وہ اپنے فرائض مزید محنت اور لگن سے ادا کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اپنے دفتر میں محکمہ اطلاعات کے مختلف محکموں میں تعینات افسران تعلقات عامہ کے ایک اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں پی آر اوز کی پیشہ ورانہ ذمہ داریوں سے متعلق فرداً فرداً رپورٹ لی گئی جب کہ افسران کو درپیش مسائل کے حوالے سے گفتگو ہوئی۔سیکریٹری اطلاعات سندھ نے میڈیا کے ذریعے سندھ کابینہ کے تمام وزراءاور محکموں کی کارکردگی عوام میں اُجاگر کرنے کے لیے مزید کوششوں پر زور دیا۔اور اس سلسلے میں تمام وسائل بروئے کار لانے کی ہدایت دیں۔اس موقع پر سیکریٹری اطلاعات اعجاز حسین بلوچ نے کہا کہ بلاشبہ محکمہ اطلاعات کو سندھ حکومت کے محکمو ں میں نما یا ں حیثیت حا صل ہے۔اور یہ محکمہ عوام اور حکومت کے درمیان پل کا کردار اداد کرتا ہے اس تناظر میں پی آر اوز کی ذمہ داریاں مزید بڑھ جاتی ہیں۔ انہو ں نے تمام افسران کو متنبہ کیا کہ فرا ئض کی انجا م دہی میں کسی قسم کی کو تا ہی بر دا شت نہیں کی جا ئے گی۔انہوں نے افسران کو یقین دہانی کروائی کہ ان کی محکمہ جاتی ترقیوں سمیت ان کو دیگر درپیش مسائل جلد حل کئے جائیں گے انہوں نے کہا کہ میرے دفتر کے دروازے آپ کے لئے کھلے ہیں۔ اجلاس میں ڈائریکٹر انفارمیشن سلیم خان ، ڈائیریکٹر پریس انفا ر میشن عزیز احمد ہکڑو ، ڈپٹی ڈائریکٹر سید محمد حسن نقوی، فیصل ظفر فاروقی، فدا حسین بالادی،ماجد خان ، سعید میمن ، سید سعد علی، شکیل ڈوگر، شبیر بابر ، عاطف وگھیو ، فرحت امتیاز ، جعفر پنہوراور دیگر افسرا ن بھی موجود تھے۔ ہینڈ آﺅٹ نمبر569۔۔۔

محکمہ اطلاعات حکومت سندھ فون۔۔99204401 کراچی مور خہ09جون، 2021 کراچی 9 جون۔وزیر ثقافت, سیاحت و نوادرات سید سردار علی شاہ کے خصوصی احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے محکمہ ثقافت کے سیکریٹری غلام اکبر لغاری نے صوبے کے مستحق فنکاروں, شاعروں, سازندوں و ہنرمندوں کے لیے سالانہ وظیفے کی دوسری قسط کے چیک جاری کردیے ہیں۔سیکریٹری غلام اکبر لغاری نے اپنے جاری کردہ پریس بیان میں کہا کہ صوبے کے تقریباً 850 مستحق فنکاروں, شعراءو ادیب اور سازندوں کو محکمہ ثقافت کی طرف سے سالانہ 60 ہزار روپے کی پہلی قسط 30 ہزار روپے کے چیک ماہ رمضان کے دوران ہی بھیج دیئے گئے تھے. انہوں نے مزید کہا کہ وزیر ثقافت سید سردار علی شاہ کی خاص ہدایات پر آج تمام مستحقین کے لیے وظیفے کی دوسری قسط 30 ہزار روپے کے چیک محکمہ ثقافت کے آفیسز کو بھجوائے گئے ہیں. اس سلسلے میں تمام Stipend holders کو گزارش کی جاتی ہے کہ وہ صوبے کے مختلف شہروں میں موجود محکمے کے ریجنل ہیڈکوارٹرز سے اپنے اپنے نام چیک کل سے وصول کرسکتے ہیں۔ ہینڈآو ¿ٹ 570۔۔۔ایس ایم

محکمہ اطلاعات حکومت سندھ فون۔۔99204401 کراچی مور خہ09جون، 2021 کراچی9جون۔مشیر قانون, ماحولیات, موسمیاتی تبدیلی اور ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ محکمہ ماحولیات کراچی میں تین سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ لگائے گا جن کے لگنے کے بعد شہر کا استعمال شدہ گندہ پانی بے ضرر ہوکر سمندر میں بہایا جائے گا اور ہمارے سمندری ماحول پر آبی آلودگی کا دباو ¿بڑی حد تک کم ہوجائے گا وہ بدھ کو اقرا ءیونیورسٹی میں عالمی یوم ماحول کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے اس موقع پر وائس چانسلر ڈاکٹر وسیم قاضی، کمانڈر پاکستان نیوی رئیر ایڈمرل اویس بلگرامی ، آئی جی موٹر وے کلیم امام، وی سی جامعہ کراچی خالد عراقی، وی سی سندھ زرعی یونیورسٹی فتح مری اور دیگر بھی موجود تھے۔مشیر ماحولیات نے کہا کہ عوام اپنے رویوں میں ماحول دوست تبدیلی لاتے ہوئے ماحول کو اپنائیں اور اسے بہتر بنائیں کیونکہ ماحول کی بہتری کے لیے ہر ایک کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا.ان کا کہنا تھا کہ گلوبل وارمنگ دراصل گلوبل وارننگ ہے جسے ہمیں معمولی نہیں سمجھنا چاہئیے. گلوبل وارمنگ اور موسمیاتی تبدیلی کا آسان حل شجرکاری ہے کیونکہ درخت گرمی کی شدت کم اور موسم میں ٹھیراﺅ لاتے ہیں.اس لیے ماحول بچانے اور اپنی اور اپنی آئندہ نسلوں کی بقاءکے لیے عوام کو چاہئیے کہ زیادہ سے زیادہ درخت لگائیں.مرتضی وہاب نے مزید کہا کہ ہمیں ایک قوم کی حیثیت سے اس سوچ کو فروغ دینا ہوگا کہ میں نے اپنے صوبے اپنے ملک کو کیا دیا۔ پائیدار ماحول کے لیے ہمیں پلاسٹک کی تھیلیوں کو ترک کرنا ہوگا، اور دکاندار کو کہنا ہوگا کہ مجھے پلاسٹک کی تھیلی میں سبزی، دوایاں نہیں چاہئیے۔الغرض ہمیں اپنے معاشرے کو بہتر بنانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔مشیر ماحولیات کا کہنا تھا کہ جب بھی ہم ملک سے باہر جاتے ہیں تو ہم مہذب بن جاتے ہیں، سڑک پر کچھ نہیں پھینکتے ہیں یہی رویہ ہمیں اپنے ملک میں بھی عام کرنا ہوگا۔مل جل کر ہم سرسبز کراچی، سرسبز سندھ اور سرسبز پاکستان بنا سکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم اپنے طالبعلموں کو یہ شعور دیں کہ ان میں سے ہر ایک یونیورسٹی اور اپنے گھر میں ایک ایک پودا لگایا۔ہمیں ماحولیات کی افادیت کو عام کرنا ہوگی۔ہم سب کو اپنے آپ سے تہیہ کرنا ہوگا، وعدہ کرنا ہوگا کہ ہم درخت لگائیں گے، اور اسی بات کی ایک دوسرے کو ترغیب دینی ہوگی۔انہوں نے پیشکش کی کہ شجر کاری کے لیے اگرآپ کو پودے چاہئیں تو سندھ حکومت آپ کو مہیا کریگی۔اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ کلفٹن اربن فاریسٹ کراچی والوں کے لئے تحفہ ہے۔جہاں پر 50 ہزار پودے/درخت لگائے گئے ہیں۔اسی طرح کڈنی ہل میں ہزاروں درخت لگائے گئے ہیں، جنہیں شہری جاکر دیکھ سکتے ہیں یہی نہیں بلکہ تمام شہروں اور صوبے بھر میں درخت لگا? جا رہے ہیں۔ ہینڈآ ﺅ ٹ نمبر 571۔۔۔ایم آئی زیڈ محکمہ اطلاعات حکومت سندھ فون۔۔99204401 کراچی مور خہ09جون، 2021 اس سال پورے ملک میں پولیو کا کوئی کیس نہ ہونا بڑی کامیابی۔ وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو کراچی 9 جون۔ وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے کہا ہے کہ اس سال میں پورے ملک میں پولیو وائرس کا کوئی کیس نا ہونا ایک بہت بڑی کامیابی ہے۔ یہ بات انہوں نے پولیو اوورسائٹ بورڈ کے وفد سے ملاقات کے دوران کہی جس میں کرس الیاس اور ڈبلیو ایچ او اور روٹری کے دیگر اداروں کے حکام نے بھی اجلاس میں شرکت کی ہے۔وزیر صحت ڈاکٹر عذرا پیچوہو اور چیف سیکریٹری سید ممتاز علی شاہ کی مشترکہ صدارت میں ہونے والے اجلاس میں محکمہ صحت کے افسران نے جاری پولیو مہم کے متعلق آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ 7 روزہ پولیو مہم میں 94 لاکھ بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جا رہے ہیں اور ہائی رسک یوسیز پر خاص توجہ دی جا رہی ہے۔بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاو ¿نڈیشن پولیو نگران بورڈ کے صدر ڈاکٹر کرس الیاس نے پولیو کے خاتمے کی مہم میں کامیابی حاصل کرنے پر حکومت سندھ کی تعریف کی۔صوبائی وزیر صحت نے اجلاس کو پولیو کے خاتمے کی مہم کے سلسلے میں جاری اقدامات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کے بعد یہ توقع کی جارہی ہے کہ تارکین وطن کی ایک بڑی تعداد پاکستان آسکتی ہے جو پولیو کے خلاف جنگ کے سلسلے میں پاکستان کے لئے ایک بہت بڑا چیلنج ہوگا۔چیف سکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے عالمی شراکت داروں سے جن میں ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن ، روٹری انٹرنیشنل اور بل اور میلنڈا گیٹس فاو ¿نڈیشن نے ملک کو تکنیکی اور مالی مدد فراہم کرنے پر اظہار تشکر کیا۔ ہینڈآﺅ ٹ نمبر 572۔۔۔اے وی