کمشنر کراچی افتخار شالوانی کا مارکیٹوں کا اچانک دورہ، دو لاکھ سے زائد جرمانہ اور 6 سے زائد افراد کو گرفتاری کا حکم

کراچی – کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے رمضان المبارک میں عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کرنے کیلئے تمام ڈپٹی کمشنرز، اسٹنٹ کمشنرز و ریونیو افسران کو مارکیٹ کمیٹی و بیورو آف سپلائی وپرائیسز کے عملداروں کے ساتھ شہر بھر کی مارکیٹوں کا مسلسل اچانک دوروں اور نگرانی کی ہدایات کی روشنی میں رمضان کے دوران اور بعد میں بھی قیمتوں پر ضابطہ و لسٹوں کے مطابق قیمتوں کو یقینی بنانے کے معاملے پر آج خود طارق روڈ لبرٹی مارکیٹ، محمود آبادمارکیٹ فریدکو چوک برنس روڈ گوشت مرغی اور سبزی مارکیٹوں کا اچانک دورہ کیا۔انکے ہمراہ ڈی سی ساوٗتھ صلاح الدین ،اسسٹنٹ کمشنر صدر مطاہر وٹو، اسسٹنٹ کمشنر فیروزآباد ساجدہ ایازقاضی، مختیار کارفیصل گجر و دیگر افسران بھی ساتھ تھے۔ کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے ذاتی طورپر رمضان المبارک میں قیمتوں پر ضابطہ اور لسٹ کے مطابق نرخ وصول کرنے لسٹوں کو آویزاں کرنے اور مناسب ناپ تول کی شکایات کا  جائزہ لیا اور دکانداروں سے معلومات بھی لیں۔ خلاف ورزی کرنیوالوں سپر اسٹور، گوشت مارکیٹ مرغی فروش اورطاھر مصالحہ،امتیاز چکن راحت سوئیٹس و ماشاء اللہ ملک شاپ ودیگر دوکانوں کا بھی دورہ کیا  اور ایک لاکھ سے زائد جرمانہ اور گرفتاری کرنے کا حکم جاری کیا۔


محمودآباد میں بھی کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے لسٹ کے مطابق نرخ نہ دینے پر بھی فوری کارروائی کرتے ہوئے بھاری جرمانہ اور گرفتاری کا حکم دیا اور مزید ایک لاکھ سے زائد جرمانہ کیا۔ڈی سی ساوٗتھ صلاح الدین کو سخت ہدایات دیں کہ وہ متعلقہ افسران کے ساتھ دوبارہ دورہ کریں اور بھاگنے والے مختلف دکانداروں کے خلاف سخت کارروائی کریں اور نہ صرف جرمانہ بلکہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ جرمانہ عوام سےزائد نرخ وصول کرکے نہ لیا جائے بلکہ خلاف ورزی کرنیوالوں کے خلاف انکی ملکیت و سازو سامان بھی ضبط کیا جائے تاکہ دوبارہ زائد نرخ اور خلاف ورزی نہ کرسکیں۔غیر قانونی تجاوزات کو دوبارہ نہ کرنے دیا جائے کیونکہ عوام کو سہولیات اور سڑکوں کوکشادہ بنانے کیلئے ہی تجاوزات کا خاتمہ کیا تھا۔ مکمل طورپر دولاکھ سے زائد جرمانہ اور 6 سے زائد افراد کو گرفتاری کا حکم دیا گیا۔کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اپنی ذمہ داری نبھائیں اور افسران کو شکایات کریں تاکہ بھرپور کارروائی کریں، ریلیف فراہم کرسکیں۔حکومت نے ٹھوس اقدامات کرتے ہوئے عوام کی سہولیات کیلئے رمضان میں اور بعد میں بھی اشیاء نرخ پر ضابطہ کیلئے مسلسل نگرانی اور اچانک دورے کئے جائینگے۔افسران پہلے ہی فیلڈ میں اپنا کام شروع کرچکے ہیں اور حکومت بھی نگرانی کررہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں