22ملکوں میں پاکستان کی قومی ایئر لائن پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن بند

ایک زمانہ تھا جب پاکستان کی قومی ایئر لائن پی آئی اے دنیا کے کونے کونے میں جاتی تھی پی آئی اے سے صبر کرنا لوگ اپنے لئے فخر اور اعزاز کی بات سمجھتے تھے پی آئی اے اپنے فلائٹ ٹائمنگ اور سہولتوں کے لحاظ سے بہترین ایئرلائن شمار کی جاتی تھیں لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ پی آئی اے کی یہ ہوگیا اور شہرت ماضی کا حصہ بن گئے آج پاکستان کی قومی ایئرلائن کا حال یہ ہے کس کے جہاز اب دنیا کے صرف 18 ملکوں تک محدود ہوگئے ہیں بائیس ملکوں میں پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن بند کیا جاچکا ہے مظاہر پی آئی اے نے نئے بزنس پلان کے مطابق غیر منافع بخش رواج کو بند کردیا ہے اور مزید بند کرنے کی تیاری کی جارہی ہے پی آئی اے جاپان کے شہر ٹوکیو اور تھائی لینڈ کے شہر میں خوف کے روٹس کو بھی بند کر چکی ہے یہی حکام کا کہنا ہے کہ اب صرف ان نئے روس پر پرواز چلائی جائیں گی جو منافع بخش ہونگے پی آئی اے کو جادو کی کمی کا سامنا ہے اکثر پرانے جہاز مختلف خرابیوں کی وجہ سے گراؤنڈ کئے جا چکے ہیں قومی ایئرلائن کا خسارہ چار سو سولہ ارب روپے تک پہنچ چکا ہے ۔
پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن اس وقت برطانیہ اٹلی فرانس اسپین ناروے ڈنمارک سعودی عرب عمان متحدہ عرب امارات ایراق کا تر چین ملائشیاء بھارت افغانستان بنگلہ دیش تھائی لینڈ اور کینیڈا کے لئے جاری ہے ۔
آنے والے دنوں میں پی آئی اے کے انٹرنیشنل روس کے ساتھ ساتھ ڈومیسٹیک روڈ پر بھی مزید مشکلات نظر آرہی ہیں اندرون ملک مسافروں کے لیے کرائے مہنگے ہوتے جا رہے ہیں اور صورتوں میں مزید کمی آتی جا رہی ہے ۔
ایوی ایشن ماہرین کے مطابق پاکستان میں قومی اور نجی ایئرلائنز کے لئے مسائل موجود ہیں اور سب سے زیادہ مسائل سول ایوی ایشن کی طرف سے پیدا کردہ ہے جس کی جانب سے ہر چیز پر ٹیکس اور فیس اشرف بے تحاشہ بڑھا دی گئی ہے اور نجی ایئرلائنز کو زیادہ تنگ کیا جاتا ہے ۔جبکہ قومی ایئرلائن میں سفارشی بھرتیوں نے نقصان پہنچایا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں